’گورنمنٹ نے ملک کی معیشت اور جمہوریت کو تباہ کر دیا ہے، بلاول بھٹو

پیپلز پارٹی کے چیئرمین بلاول بھٹو زرداری نے جیو نیوز کے پروگرام جیو پاکستان میں خصوصی انٹرویو دیتے ہوئے کہا ہے کہ موجودہ حکومت نے ملک کو جمہوریت اور معاشی ترقی سے محروم کرنے کے ساتھ ساتھ عوام کے اعتماد کو بھی ختم کر دیا ہے۔ 

پی پی پی رہنما کے مطابق عدم اعتماد کی قرارداد پر تمام اپوزیشن جماعتیں ایک پیج پر ہیں۔ انہوں نے کہا کہ اپوزیشن موجودہ حکومت کے خاتمے کے بعد ایک عبوری حکومت قائم کرے گی اور آزادانہ اور منصفانہ انتخابات کرائے گی۔ 

 انہوں نے کہا کہ امید ہے کہ ہم تحریک عدم اعتماد کے ذریعے عمران خان کو ایک بار پھر پارلیمنٹ سے نکالنے میں کامیاب ہو جائیں گے اور جیسے ہی نمبر مکمل ہوں گے عمران خان کو فارغ کر دیا جائے گا۔ 

یہ بھی پڑھیں | پاکستان اور ازبکستان کا مسئلہ افغانستان پر رابطہ رکھنے کا اعلان 

 انہوں نے کہا کہ پی پی پی سے بہت سے مختلف گروپس سے رابطہ کیا جا رہا ہے، لیکن یہ بتانے کا صحیح وقت نہیں ہے کہ وہ کون سے گروپس ہیں۔ انہوں نے کہا کہ وقت آنے پر تمام کارڈز سامنے آ جائیں گے۔ 

بلاول بھٹو نے مسلم لیگ (ق) کے ووٹ کے جواب میں کہا کہ یہ کام اتنا آسان نہیں ہوگا اور حکومت کو ان کا ووٹ حاصل کرنے کے لیے بڑی پیشکش کرنی ہوگی۔ 

 بلاول بھٹو نے کہا کہ پی پی پی کے اسلام آباد پہنچنے سے پہلے وزیراعظم کو استعفیٰ دے دینا چاہیے اور اگر پی ٹی آئی مقابلہ کرنا چاہتی ہے تو اسے انتخابات کے ذریعے کرنا چاہیے۔ 

 تاہم، انہوں نے پی ڈی ایم کے صدر مولانا فضل الرحمان کے اس اعلان پر تبصرہ کرنے سے انکار کیا کہ اپوزیشن آئندہ 48 گھنٹوں میں پی ٹی آئی کی زیر قیادت حکومت کے خلاف تحریک عدم اعتماد پیش کرے گی۔ 

 انہوں نے مسلم لیگ (ن) کے قائد نواز شریف کی واپسی کے بارے میں پوچھے گئے سوال کا جواب دینے سے بھی انکار کر دیا یہ کہتے کرتے ہوئے کہ یہ نواز شریف پر منحصر ہے کہ وہ واپس آنا چاہتے ہیں یا نہیں۔

 اپنے نوزائیدہ بھتیجے اور بختاور بھٹو زرداری کے بیٹے کے بارے میں بات کرتے ہوئے بلاول بھٹو نے کہا کہ یہ بدقسمتی کی بات ہے کہ آصف علی زرداری (ان کے والد) کا نام ایگزٹ کنٹرول لسٹ (ای سی ایل) میں ہونے کی وجہ سے اپنے پہلے پوتے کو دیکھنے سے قاصر ہیں۔ وہ موجودہ حکومت کو گرانے اور صاف اور منصفانہ انتخابات کے ذریعے آنے والی حکومت کو تبدیل کرنے کی امید رکھتے ہیں۔

حرمین رضا

جاویریہ حارث اردو خبر میں پاکستان میں مقیم مصنف اور سابق ایڈیٹر ہیں۔

ہمارا نیوز لیٹر جوائن کریں
تازہ ترین آرٹیکلز، نوکریوں اور تفریحی خبریں ڈائریکٹ اپنے انباکس میں حاصل کریں
یہاں ایک لاکھ ستر ہزار سبسکرائبرز ہیں