کشمیری مسلمان نے پانچ سو میٹر لمبے صفحے پر مکمل قرآن مجید لکھ کر عالمی ریکارڈ بنا دیا

27 سالہ کشمیری خطاط مصطفیٰ ابن جمیل نے سات ماہ میں 500 میٹر کے طومار پر قرآن پاک لکھ کر نیا عالمی ریکارڈ بنایا ہے۔

مصطفیٰ ابن جمیل نے ایک انوکھا ریکارڈ قائم کیا

 رائزنگ کشمیر کی رپورٹ کے مطابق کشمیر کی وادی گریز کے علاقے بانڈی پورہ میں رہنے والے مصطفیٰ ابن جمیل نے ایک انوکھا ریکارڈ قائم کیا ہے۔ 

ادھر کشمیری فوٹو جرنلسٹ باسط زگر نے اپنے ٹوئٹر اکاؤنٹ پر ایک ویڈیو ٹویٹ کی ہے۔ ویڈیو میں 500 میٹر پیپر کا سارا کردار سامنے آ رہا ہے اور صحافی تصویریں کلک کرتا نظر آ رہا ہے۔

 ویڈیو شیئر کرتے ہوئے باسط زگر نے لکھا کہ ’’27 سالہ کشمیری خطاط مصطفیٰ ابن جمیل نے سات ماہ میں 500 میٹر کے اسکرول پر قرآن پاک لکھ کر عالمی ریکارڈ توڑ دیا ہے۔”

یہ بھی پڑھیں | “مجھے مونچھیں پسند ہیں” بھارتی خاتون کی تصاویر وائرل 

یہ بھی پڑھیں | “مجھے مونچھیں پسند ہیں” بھارتی خاتون کی تصاویر وائرل 

 اس ویڈیو نے دیکھنے والوں کو حیران کردیا ہے اور اسے 12.5 ہزار ویوز ملے ہیں۔ 

 حالانکہ مصطفیٰ خطاط ہیں اور انہوں نے یہ کام 7 ماہ میں مکمل کیا ہے۔ لنکن بک آف ریکارڈز نے ان کے کارنامے کو عالمی ریکارڈ قرار دیا ہے اور اس پر انہیں انعام بھی دیا ہے۔

 ویب سائٹ کے مطابق مصطفیٰ نے 14.5 انچ چوڑے اور 500 میٹر لمبے کاغذ پر قرآن مجید لکھا ہے۔ یہی نہیں الجزیرہ کی ٹویٹر ویڈیو کے مطابق وہ روزانہ 18 گھنٹے تک کاغذ پر قرآن مجید لکھتا تھا۔ مصطفیٰ نے بتایا کہ اس نے اپنی ہینڈ رائٹنگ کو بہتر بنانے کے لیے خطاطی شروع کی۔ خطاطی سیکھتے ہوئے اپنے دستخط بناتے اور قرآن مجید کی آیات لکھتے۔ پھر اس نے سوچا کہ پورا قرآن لکھوں۔ 

ویڈیو دیکھنے کے بعد لوگوں نے مصطفیٰ کو مبارکباد دی۔ ایک ٹوئٹر صارف نے کہا کہ لوگوں کو مصطفیٰ کے بارے میں جاننا چاہیے کیونکہ اس نے شاندار کام کیا ہے۔ ایک اور نے بتایا کہ چند ماہ قبل مصطفیٰ نے شینا زبان میں قرآن کا ترجمہ کیا تھا۔

حرمین رضا

جاویریہ حارث اردو خبر میں پاکستان میں مقیم مصنف اور سابق ایڈیٹر ہیں۔

ہمارا نیوز لیٹر جوائن کریں
تازہ ترین آرٹیکلز، نوکریوں اور تفریحی خبریں ڈائریکٹ اپنے انباکس میں حاصل کریں
یہاں ایک لاکھ ستر ہزار سبسکرائبرز ہیں