کراچی کے فٹ پاتھوں سے بل بورڈ ہٹانے کا حکم

کراچی شہر کی انتظامیہ اور کمشنر افتخار شلوانی نے حکم دیا ہے کہ کراچی میں فٹ پاتھوں پر کوئی بل بورڈ ز نہیں لگائے جائیں گے۔

 انہوں نے ہدایت کی ہے کہ عمارتوں پر صرف چھوٹے سائز کے بل بورڈ لگائے جائیں۔ 

تفصیلات کے مطابق انہوں نے کہا کہ اس کا مقصد شہر کو خوبصورت بنانا اور پیدل چلنے والوں کے حقوق کا تحفظ کرنا ہے۔ وہ زبیر چیا کی سربراہی میں کورنگی ایسوسی ایشن آف ٹریڈ اینڈ انڈسٹری (کے اے ٹی آئی) کے وفد سے ملاقات کر رہے تھے۔ کاٹی کے صدر سلیمز زمان اور سابق صدر شیخ عمر ریحان نے بھی اس میں شرکت کی۔

 کمشنر کراچی کا کہنا تھا کہ انہوں نے بزنس کمیونٹی کو بتایا کہ ملکی ترقی میں اس کا ایک اہم کردار ہے۔ انہوں نے کہا کہ صنعتی علاقوں کے روڈ انفراسٹرکچر کو ترقی دینے کے لئے اقدامات اٹھائے جارہے ہیں۔

یہ بھی پڑھیں | اقوام متحدہ سے خطاب میں وزیر اعظم عمران خان کی کوویڈ19 کے دوران ترقی پذیر ممالک کے لئے فوری معاشی مدد کی اپیل

 انہوں نے کہا کہ اگر موجودہ الاٹیز نیلامی کے بعد چکر لگانے کی کوششیں کرنا چاہتے ہیں تو ہمیں کوئی مسئلہ نہیں ہوگا۔ 

انہوں نے مزید کہا کہ فٹ پاتھوں پر بڑے سائز کے سائن بورڈ پیدل چلنے والوں کے حقوق کی پامالی کررہے ہیں اور فرش کو تباہ کررہے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ کراچی میٹرو پولیٹن کارپوریشن محدود وسائل کے باوجود شہر کو بہتر بنانے کے لئے کوشاں ہے۔ 

کٹی وفد کی منتظم سے درخواست تھی کہ وہ کراچی چیمبر آف کامرس اینڈ انڈسٹری کے سابق صدر ایس ایم منیر کی خدمات کے لئے کورنگی 3 ہزار روڈ کا نام تبدیل کرے۔ اس درخواست کو شلوانی نے قبول کیا۔ انہوں نے کہا کہ ایسے تمام لوگوں کی خدمات کو تسلیم کیا جانا چاہئے۔

جاویریہ حارث

جاویریہ حارث اردو خبر میں پاکستان میں مقیم مصنف اور سابق ایڈیٹر ہیں۔