کار فرسٹ نامی کمپنی نے پاکستان میں کام کرنا بند کر دیا

پاکستان کی جدید ترین کمپنی بن گئی

لاہور میں قائم ایک سٹارٹ اپ کمپنی، کار فرسٹ، پاکستان کی جدید ترین کمپنی بن گئی ہے جس نے ملک بھر میں اپنے آپریشنز بند کرنے کا اعلان کیا ہے۔ 

آج بروز جمعہ اپنے لنکڈ ان پیج پر کار فرسٹ نے اپنے صارفین کو بتایا کہ کار فرسٹ نے پاکستان میں آپریشن بند کرنے کا فیصلہ کیا ہے۔ اس صفحہ میں 365 ملازمین کی فہرست بھی دی گئی ہے جنہوں نے پیشہ ورانہ نیٹ ورکنگ اور کیریئر ڈویلپمنٹ پلیٹ فارم پر کار فرسٹ کو اپنے آجر کے طور پر شامل کیا ہے۔ 

 اس نے مزید کہا کہ ہم اپنی ٹیم، شراکت داروں اور سب سے اہم بات یہ ہے کہ اپنے صارفین کا اپنے سفر کے دوران مسلسل تعاون کے لیے شکریہ ادا کرنا چاہیں گے۔

بندش کو سنبھالنے اور اختتامی مدت

 کار فرسٹ نے کہا کہ ایک ٹیم ادارے کی بندش کو سنبھالنے اور اختتامی مدت کے دوران شراکت داروں اور صارفین کے سوالات کا جواب دینے کے لیے موجود رہے گی۔ 

سال 2016 کے آخر میں شروع کی گئی ایک کمپنی ، کار فرسٹ نے ایک درمیانی آدمی کے طور پر کام کیا۔ یہ کمپنی صارفین سے کاریں خریدتی اور انہیں آن لائن نیلامیوں کے ذریعے ڈیلرز کو فروخت کرتی۔

یہ بھی پڑھیں | شہباز گل ٹھیک اور صحت مند ہیں، پمز ہسپتال نے میڈیکل رپورٹ جاری کر دی 

یہ بھی پڑھیں | ملتان سے سکھر موٹروے: بس اور آئل ٹینکر کا خوفناک تصادم، بیس افراد جاں بحق 

 کار فرسٹ نے کار بیچنے والوں کو ایک گھنٹہ کے اندر اپنی کاروں کا معائنہ اور فکس قیمت پر فروخت کرنے کا عمل فراہم کیا جس میں ادائیگی کے لیے پروسیسنگ کا وقت بھی شامل ہے۔ استعمال شدہ کاروں کے لیے کار فرسٹ کے آن لائن نیلامی کے پلیٹ فارم نے بھی اپنی ایپ پیش کی جس نے شراکت داروں اور خریداروں کے نیٹ ورک کو اپنی مطلوبہ کار تلاش کرنے کا فوری طریقہ فراہم کیا۔

اسٹارٹ اپس اور قائم کردہ کاروبار

یہ شٹ ڈاؤن پاکستان میں کچھ کمپنیوں کے بند ہونے رجحان کے درمیان سامنے آیا ہے جس میں متعدد اسٹارٹ اپس اور قائم کردہ کاروباروں نے مکمل یا  کچھ حصے کو بند کرنے کا اعلان کیا ہے۔

 اس سے پہلے کریم نے پاکستان میں اپنے کھانے کی ترسیل کے کاروبار کو بھی معطل کر دیا تھا۔

حرمین رضا

جاویریہ حارث اردو خبر میں پاکستان میں مقیم مصنف اور سابق ایڈیٹر ہیں۔