کابینہ نے بجلی کے نرخوں میں 5.65 روپے یونٹ اضافے کی منظوری دے دی

وفاقی کابینہ نے جمعہ کو ایک آرڈیننس کے نفاذ کی منظوری دے دی جس کا مقصد صارفین سے 884 ارب روپے وصول کرنے کے لئے اکتوبر سے اب تک بجلی کے نرخوں میں کم از کم 5.65 روپے فی یونٹ اضافے کے لئے قانونی راہ تیار کرنا ہے۔ 

یہ دوسری ہنگامی سمری تھی جو بین الاقوامی مالیاتی فنڈ پروگرام کو دوبارہ گرنے سے بچانے کے لئے وفاقی کابینہ نے گردشی کے ذریعے منظوری دی تھی۔ اس سے قبل ، کابینہ نے آئی ایم ایف کی طرف سے طے شدہ پیشگی شرائط کے ایک حصے کے طور پر فوری طور پر 140 ارب روپے اضافی ٹیکس عائد کرنے کی بھی منظوری دی تھی۔ 

کابینہ نے ایک آرڈیننس کے ذریعے ریگولیشن آف جنریشن ، ٹرانسمیشن اینڈ ڈسٹری بیوشن آف الیکٹرک پاور ایکٹ ، جسے عام طور پر نیپرا ایکٹ کے نام سے جانا جاتا ہے ، آرڈیننس کے ذریعے مزید ترمیم کی اجازت دی۔

 اس آرڈیننس سے حکومت کو یہ اختیار ملے گا کہ وہ بجلی کی آمدنی کی 10 فیصد ضروریات یا 1.40 روپے فی یونٹ کے برابر ایک نیا سرچارج لگائے۔ اس کے علاوہ ، اس آرڈیننس سے سرکلر ڈیبٹ مینجمنٹ پلان پر عمل درآمد بھی ہوگا ، جسے کابینہ نے منظور کر لیا ہے۔ 

قانونی ترامیم نے بجلی کے نرخوں میں اضافے کی اطلاع دینے کے وفاقی حکومت کے اختیارات کو کم کردیا ہے۔  آئی ایم ایف کے رہائشی نمائندے ٹریسا ڈابہ نے بھی جمعہ کو ٹویٹ کیا “پاکستان زندہ باد”۔ ذرائع کا کہنا ہے کہ ایک بار جب تمام تر تمام تر کاروائیاں پوری ہوجائیں تو ، آئی ایم ایف بورڈ اگلے ہفتے پاکستان کی قرض کی درخواست منظور کرسکتا ہے۔ 

یہ بھی پڑھیں | خیبرپختونخواہ حکومت کا کریپٹو مائننگ کی اجازت دینے پر غور

سرکلر ڈیبٹ منیجمنٹ پلان سے پتہ چلتا ہے کہ اس سال سے اکتوبر تک بجلی کے نرخوں میں 620 مرحلوں میں 5.65 روپے فی یونٹ کا اضافہ ہو گا جبکہ اپریل 2021 سے جون 2023 تک صارفین سے 884 ارب روپے اضافی وصول ہوں گے۔ 

  خصوصی سرچارج کو شامل کرنے کے بعد ، قیمت 7 روپے فی یونٹ بڑھ جائے گی اور اضافی بوجھ 934 ارب روپے ہوجائے گا۔ پی ٹی آئی کی حکومت نے پہلے ہی ماہانہ بیس ٹیرف میں گزشتہ ماہ 1 یونٹ 95 روپے فی یونٹ اضافہ کیا ہے۔ اس اضافے کو شامل کرنے کے بعد ، محصولات میں کل اضافہ 8.95 روپے فی یونٹ ہوگا۔

 وفاقی کابینہ کے منظور کردہ منصوبے سے ظاہر ہوتا ہے کہ پاکستان نے مزید 1515 ارب روپے اضافی آمدنی کے لئے مزید دو اقساط میں 3،60 روپے فی یونٹ سالانہ بیس ٹیرف میں اضافے کا بھی وعدہ کیا ہے۔ 

جاویریہ حارث

جاویریہ حارث اردو خبر میں پاکستان میں مقیم مصنف اور سابق ایڈیٹر ہیں۔

سبسکرائب
کو مطلع کریں
guest
0 Comments
Inline Feedbacks
View all comments
0
آپ اس متعلق کیا کہتے ہیں؟ اپنی رائے کمنٹ کریںx
()
x