مصنف کے بارے میں

صفحۂ اول

ڈیرن سمی کا نیوزی لینڈ سیریز کی منسوخی پر بیان، پاکستان کو محفوظ ملک قرار دے دیا

ویسٹ انڈیز کے سابق کپتان ڈیرن سیمی کا کہنا ہے کہ وہ نیوزی لینڈ کرکٹ ٹیم کے دورہ پاکستان کو چھوڑنے سے مایوس ہیں۔ 

تفصیلات کےمطابق بلیک کیپس نے گزشتہ دن صبح ٹوئٹر پر اس فیصلے کا اعلان نیوزی لینڈ کی حکومت کی سکیورٹی الرٹ کے بعد کیا۔ دورے کو منسوخ کرنے کا فیصلہ راولپنڈی میں ون ڈے انٹرنیشنل سیریز کے شیڈول شروع ہونے سے چند لمحے قبل ہوا۔ 

ڈیرن سیمی نے ٹوئٹر پر کہا کہ جب وہ پاکستان کھیلنے  جاتے تھے تو وہ ہمیشہ محفوظ محسوس کرتے تھے۔ 

یہ بھی پڑھیں | ون ڈے میچ پاکستان اور نیوزی لینڈ کے درمیان منسوخ کر دیا گیا

ویسٹ انڈیز کے سابق کھلاڑی نے لکھا کہ سیکیورٹی مسائل کی وجہ سے پاکستان بمقابلہ نیوزی لینڈ سیریز منسوخ ہونے کی خبروں کو دیکھ کر مایوس ہوا۔ 

ڈیرن سیمی نے مزید کہا کہ پچھلے 6 سالوں میں پاکستان میں کھیلا اور دورہ کیا اور یہ سب سے زیادہ خوشگوار تجربات میں سے ایک رہا ہے۔ میں نے ہمیشہ خود کو پاکستان میں محفوظ محسوس کیا ہے۔ یہ پاکستان کے لیے بہت بڑا دھچکا ہے۔ 

یاد رہے کہ ڈیرن سیمی نے 2017 سے 2020 تک پاکستان سپر لیگ میں پشاور زلمی کی کپتانی کی تھی جبکہ 2017 میں ٹائٹل جیتا۔ مارچ 2021 میں ، ڈیرن سیمی کو زلمی ٹیم کا ہیڈ کوچ مقرر کیا گیا جس کی وجہ سے وہ پی ایس ایل کے فائنل میں پہنچے جہاں وہ ملتان سلطانز سے ہار گئے۔ 

رپورٹس سے پتہ چلتا ہے کہ نیوزی لینڈ کی وزیراعظم جیسنڈا آرڈرن نے اپنے وزیر اعظم عمران خان کو بتایا کہ کرکٹرز پر اسٹیڈیم کے باہر حملہ کیا جائے گا۔ عمران خان نے بتایا کہ نیوزی لینڈ کی ٹیم پر حملہ یا سیکورٹی خدشات کی کوئی الرٹ موصول نہیں ہوئی ہے۔

حرمین رضا

جاویریہ حارث اردو خبر میں پاکستان میں مقیم مصنف اور سابق ایڈیٹر ہیں۔