پی آئی اے نے غیر منظم کارکردگی کے پیش نظر 2018 میں 67b روپے سے زیادہ کا نقصان رجسٹر کیا.

اسلام آباد (مانیٹرنگ ڈیسک) قومی کیریئر کے بورڈ آف ڈائریکٹرز کی منظوری کے بعد جاری کردہ نتائج کے مطابق ، پاکستان انٹرنیشنل ایئر لائنز (پی آئی اے) کو میلا کارکردگی کے پیش نظر 2018 میں 67 ارب روپے سے زائد کا نقصان ہوا ، جس سے اس کے خسارے میں 32 فیصد اضافہ ریکارڈ کیا گیا۔

کراچی میں بورڈ کے اجلاس کے بعد اس کا اصل نقصان ، جو 67،032،000،000 روپے تھا ، اس کا انکشاف ہوا۔ اجلاس کے دوران بورڈ نے کمپنی کے مالی نتائج 2018 کو شائع کرنے کے لئے آگے بڑھا دیا۔

سال کے آخر کی رپورٹ میں یہ بھی بتایا گیا کہ پی آئی اے کو 2017 میں اسی طرح کے تباہ کن نقصان کا سامنا کرنا پڑا۔ 31 دسمبر 2018 تک ایئر لائن کا مجموعی خسارہ 437 ارب روپے کو عبور کرچکا ہے ، جبکہ اس پر 288 ارب روپے کا قرض ہے۔

مزید یہ کہ پی آئی اے سالانہ قرضہ سود 16 ارب روپے ادا کرتی ہے۔

ایئر لائن نے پاکستان اسٹاک ایکسچینج میں اپنی اختتامی سال کی مالی رپورٹ پیش کی ہے۔

ثاقب شیخ۔

ہمارا نیوز لیٹر جوائن کریں
تازہ ترین آرٹیکلز، نوکریوں اور تفریحی خبریں ڈائریکٹ اپنے انباکس میں حاصل کریں
یہاں ایک لاکھ ستر ہزار سبسکرائبرز ہیں