پولیس عمران خان کے گھر زمان پارک کا دروازہ توڑ کر اندر داخل

پولیس عمران خان کے گھر زمان پارک کا دروازہ توڑ کر اندر داخل

زمان پارک میں پولیس گرینڈ آپریشن کرتے ہوئے عمران خان کی رہائش گاہ کا گیٹ توڑ کر اندر داخل ہو گئ ہے۔

 زمان پارک میں پولیس کی جانب سے کرینوں کی مدد سے گیٹ، رکاوٹیں اور رکاوٹیں توڑ دی گئیں، باہر لگے ٹینٹ اور کیمپ گرادیے گئے۔ اندر موجود پی ٹی آئی کارکنوں نے پولیس اہلکاروں پر پتھراؤ کیا جبکہ پولیس نے لاٹھیوں کا استعمال کیا۔ 40 کے قریب کارکنوں کو گرفتار کیا گیا۔

یہ بھی پڑھیں | پاکستان نے تجارت معطل کی، انڈیا

  کیا کچھ برآمد ہوا؟

پولیس کے مطابق گھر سے 16 رائفلیں برآمد ہوئی ہیں۔ ابتدائی طور پر یہ اسلحہ سرکاری معلوم ہوتا ہے جو عمران خان کو بطور وزیراعظم دیا گیا تھا۔ عمران خان نے عہدہ چھوڑنے ک  بعد یہ اسلحہ واپس نہیں کیا۔ کارکنوں سے اسلحہ، پیٹرول بم، دستی بم اور دستی بم بھی برآمد ہوئے۔  لیڈی اہلکار بھی ان کے ساتھ تھیں۔ اندر جانے کی اجازت نہ ملنے پر دروازہ توڑ دیا گیا۔

توہین عدالت کی درخواست دائر

دوسری جانب زمان پارک لاہور میں پولیس آپریشن کے خلاف لاہور ہائیکورٹ میں توہین عدالت کی درخواست دائر کر دی گئی۔ درخواست فواد چوہدری نے ایڈووکیٹ اظہر صدیق کی ثالثی کے ذریعے دائر کی تھی۔ درخواست میں آئی جی پنجاب، ڈی آئی جی آپریشنز اور چیف سیکرٹری کو فریق بنایا گیا تھا۔

 رائے میں کہا گیا کہ عدالتی احکامات کی خلاف ورزی کی جا رہی ہے۔ عمران خان کے گھر کے دروازے غیر قانونی طور پر توڑے گئے، آپریشن آرٹیکل 23، 24، 09 اور 14 کی خلاف ورزی ہے، عدالت ذمہ داروں کے خلاف توہین عدالت کی کارروائی کرے۔

حرمین رضا

حرمین رضا اردو خبر میں پاکستان میں مقیم مصنف اور سابق ایڈیٹر ہیں۔