پندرہ ستمبرسے میرج ہال کھولنے کی اجازت

15 خیبرپختونخوا ، سندھ اور پنجاب کی صوبائی حکومتوں نے پیر کو اعلان کیا ہے کہ 15 ستمبر سے صوبوں میں شادی ہال دوبارہ کھولے جائیں گے کیونکہ ملک بھر میں وائرس کے کیسز بدستور کم ہوتے جارہے ہیں اور عام کاروباری سرگرمیاں دوبارہ بحالی کی طرف جا رہی ہیں۔

 نیشنل کمانڈ اینڈ آپریشن سنٹر (این سی او سی) کی ہدایت پر حکومت سندھ کے محکمہ داخلہ نے ایک نوٹیفکیشن جاری کرتے ہوئے اعلان کیا ہے کہ شادی ہالوں پر عائد پابندی ختم کردی گئی ہے۔ نوٹیفکیشن میں کہا گیا ہے کہ شادی ہالوں میں شادی کی تقریبات 15 ستمبر سے ہوسکتے ہیں۔ تاہم ، کوویڈ19 کے تحت احتیاطی تدابیر جیسے چہرے کے ماسک پہننے اور سماجی فاصلے کا خاص خیال رکھنا ہو گا تاکہ یہ یقینی بنایا جاسکے کہ وائرس کے پھیلاؤ کا باعث نہیں بن رہےنہیں۔ 

صوبائی حکومت نے کاروباری سرگرمیوں کے لئے نظر ثانی کر کے نئے اوقات بھی جاری کئے جس کے مطابق صبح 6 بجے سے شام 8 بجے تک کاروبار کئے جا سکیں گے جبکہ دکانوں کو ہفتے کی رات 9 بجے تک کھلا رہنے کی اجازت دی گئی ہے۔

میڈیکل اسٹورز اور پمپس وغیرہ جو ضروری استعمال کی اشیا فروخت کرتی ہیں مذکورہ بالا اوقات کے ساتھ مشروط نہیں ہوں گے۔ مذکورہ بالا اقدامات پورے سندھ میں 15 اکتوبر سے لاگو ہیں۔ 

حکومت پنجاب نے بھی ایک نوٹیفکیشن جاری کیا جس  کے مطابق شادی ہالوں سے ایس او پیز کی سختی سے پیروی کرنے کا مطالبہ کیا ہے تاکہ شادی ہالوں سے وائرس نا پھیل سکے۔ ایک نوٹیفکیشن میں ، پنجاب حکومت نے اعلان کیا ہے کہ 15 ستمبر سے صوبے بھر میں تعلیمی ادارے اور شادی ہال دوبارہ کھولے جائیں گے۔ 

سیکرٹری پرائمری اینڈ سیکنڈری ہیلتھ کیئر ڈیپارٹمنٹ محمد عثمان نے کہا کہ شادی ہالوں میں ہاتھ ملانا ، گلے ملنا اور موبائل فون شیئر کرنے کی حوصلہ شکنی کے پوسٹر لگائے جائیں۔ سکریٹری کے مطابق ، شادی ہالوں کو ان کی گنجائش کا صرف 50٪ میزبانی کرنے کی اجازت ہوگی تا کہ سماجی فاصلے کو یقینی بنایا جا سکے۔

جاویریہ حارث

جاویریہ حارث اردو خبر میں پاکستان میں مقیم مصنف اور سابق ایڈیٹر ہیں۔

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *