‘پنجاب: رمضان المبارک سے قبل مرغی کے گوشت کی قیمتوں میں ہوشربا اضافہ

 نجی نیوز کے مطابق، رمضان المبارک کے قریب آتے ہی مہنگائی میں اضافہ ہونے لگا ہے۔

 پنجاب میں مرغی کے گوشت کی قیمت 73 روپے بڑھ کر 407 روپے فی کلو گرام پر پہنچ گئی ہے۔

گزشتہ ہفتے کے دوران مرغی کا گوشت 334 روپے فی کلو فروخت ہوا۔ تاہم، نئے اضافے کے ساتھ اب پنجاب میں ضروری اجناس 400/کلوگرام سے زیادہ فروخت کی جائیں گی۔ 

 اگرچہ پنجاب حکومت ایک خصوصی رمضان پیکج پر کام کر رہی ہے، تاہم توقع ہے کہ صوبے بھر میں لگائے جانے والے 317 خصوصی بازاروں میں ضروری خوردنی اشیا جیسے تازہ پھل، سبزیاں، دالیں اور مرغی کا گوشت کم قیمت پر فروخت کیا جائے گا۔

  “پیکیج” کی تیاری کرنے والے اہلکاروں نے نجی نیوز کو بتایا کہ یہ پہلے ہی طے پایا تھا کہ رمضان بازاروں میں مرغی کے گوشت کی قیمت میں 10 روپے فی کلو کمی کی جائے گی۔ 

یہ بھی پڑھیں | پیپلرز پارٹی اور پی ڈی ایم نے عمران خان کو ہٹانے کی حکمت عملی بنا لی 

دوسری جانب مارکیٹ ذرائع کا خیال ہے کہ رمضان کے آغاز پر قیمت 500 روپے فی کلو تک پہنچ سکتی ہے۔ ان کا کہنا تھا کہ گزشتہ ہفتے چکن کے گوشت کی قیمتوں میں روزانہ کی بنیاد پر تقریباً 10 روپے فی کلو کا اضافہ دیکھا گیا ہے۔

 یہاں تک کہ اگر آپ مرغی کے گوشت کی پندرہ روزہ قیمتوں کا جائزہ لیں تو اس میں تقریباً 90 روپے فی کلو کا اضافہ دیکھا گیا ہے۔ ذرائع نے بتایا کہ اگر بڑھتا ہوا رجحان برقرار رہا تو قیمت 500 روپے فی کلو سے تجاوز کر جائے گی۔ 

مارکیٹ کے جذبات کے برعکس، پاکستان پولٹری ایسوسی ایشن – نارتھ زون کے چیئرمین ڈاکٹر عبدالکریم نے کہا ہے کہ پولٹری کے گوشت کی قیمتوں میں اضافہ موسمی ڈیمانڈ سپلائی کا رجحان ہے۔ 

رمضان سے پہلے مرغی کے گوشت کی قیمتیں شادیوں کے سیزن کی وجہ سے ہمیشہ زیادہ ہوتی ہیں، جو کہ رمضان میں مانگ کم ہونے سے کم ہونا شروع ہو جاتی ہے۔ چونکہ مرغی کا گوشت خراب ہونے والا پراڈکٹ ہے، اس لیے مارکیٹ میں ہیرا پھیری کے لیے سپلائی کو مختصر عرصے میں تبدیل نہیں کیا جا سکتاہے۔

حرمین رضا

جاویریہ حارث اردو خبر میں پاکستان میں مقیم مصنف اور سابق ایڈیٹر ہیں۔