پاک آرمی کے خلاف کمپین چلانے پر معزرت خواہ ہوں، سوشل میڈیا پرسن نے معافی مانگ لی

پی ٹی آئی کے اسٹوڈنٹ ونگ

ٹی وی چینلز کی رپورٹ کے مطابق پی ٹی آئی کے اسٹوڈنٹ ونگ کے ایک سابق عہدیدار محمد منیب کیانی نے جمعہ کو اپنے اعترافی بیان میں اعتراف کیا کہ اس نے سوشل میڈیا پر پاک فوج کے جوانوں کے خلاف گندی مہم چلائی اور اس پر معافی کے طلبگار ہیں۔

یہ بتاتے ہوئے کہ وہ اب شرمندہ اور پشیمان ہیں، انہوں نے کہا کہ کچھ لوگوں کے اثر و رسوخ کی وجہ سے اس نے غلط کیا۔ منیب کیانی نے کہا کہ وہ انصاف یونین فیڈریشن کے سینئر ڈپٹی کنوینر کے طور پر کام کر چکے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ انہوں نے جمعرات کو دو ٹویٹس پوسٹ کیں۔ انہوں نے کہا کہ پہلا ٹویٹ ان کی طرف سے تیار کیا گیا تھا جبکہ دوسرا محض ایک کاپی پیسٹ تھا۔ 

انہوں نے کہا کہ اس کے لیے معلومات سولجر اسپیک، عظمیٰ خان پی ٹی آئی، سبینہ کیانی اور عمران ریاض خان کے اکاؤنٹس سے لی گئی تھیں۔ اس نے جو غلطی کی وہ “مخصوص لوگوں” کے زیر اثر ہونے کی وجہ سے تھی۔ 

یہ بھی پڑھیں | کیا پاکستان میں ڈالر ریٹ مزید نیچے جائے گا؟

یہ بھی پڑھیں | جنرل باجوہ کا سعودیہ اور دبئی سے پاکستان، آئی ایم ایف ڈیل کے لئے رابطہ

ٹویٹس میں کوئی سچائی نہیں تھی

اس نے مزید کہا کہ میں نے جو ٹویٹس کیں ان میں کوئی سچائی نہیں تھی اور یہ ایک بہت بڑی غلطی تھی۔ میں نے بھی ان کی تصدیق نہیں کی۔

 اسی بیان میں منیب کیانی کے والد فرحت نعیم کیانی نے اعتراف کیا کہ ان کے بیٹے کی ٹویٹس قابل اعتراض تھیں۔ انہوں نے کہا کہ وہ ٹویٹس کو بروقت چیک نہ کرنے کی ذمہ داری قبول کرتے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ وہ اپنے بیٹے کی غلطی کو مانتے ہیں اور اسے مستقبل میں نہیں دہرایا جائے گا۔ انہوں نے کہا کہ وہ محب وطن ہیں اور پاک فوج کا احترام کرتے ہیں۔ “میں ذمہ داری لیتا ہوں کہ وہ دوبارہ ایسا نہیں کرے گا۔ پاک فوج زندہ باد۔

حرمین رضا

جاویریہ حارث اردو خبر میں پاکستان میں مقیم مصنف اور سابق ایڈیٹر ہیں۔

ہمارا نیوز لیٹر جوائن کریں
تازہ ترین آرٹیکلز، نوکریوں اور تفریحی خبریں ڈائریکٹ اپنے انباکس میں حاصل کریں
یہاں ایک لاکھ ستر ہزار سبسکرائبرز ہیں