مصنف کے بارے میں

صفحۂ اول

پاکستان کا اقوام متحدہ سے انڈیا کے حملے پر ایکشن لینے کی درخواست

لائن آف کنٹرول (ایل او سی) کے پار بھارت اور پاکستان میں اقوام متحدہ کے ملٹری آبزرور گروپ کی ایک گاڑی کو نشانہ بنانے کے صرف ایک دن بعد ہی ایک اور کشمیری خاتون ہندوستانی فوجیوں کی طرف سے سیز فائر کی خلاف ورزی کی خلاف ورزیوں کا نشانہ بنی جبکہ پاکستان نے اس پر شدید مذمت کی ہے۔

پاکستان نے اقوام متحدہ کے ساتھ یو این ایم او جی آئی پی  پر اس واقعے کی شفاف تحقیقات شروع کرنے پر زور دیا ہے۔  پاکستان کے مستقل نمائندہ نے اقوام متحدہ کے سکریٹری جنرل (یو این ایس جی) اور اقوام متحدہ کی سلامتی کونسل کے صدر کو لکھے گئے خط میں ان سے درخواست کی ہے کہ وہ اقوام متحدہ کے ممبروں پر حملے کی زبردستی مذمت کریں اور بھارت سے مطالبہ کریں کہ سیز فائر 2003 کی تفہیم کا احترام کریں۔

یہ بھی پڑھیں | بھارتی فوج کی جنگ بندی کی خلاف ورزی ، اقوام متحدہ کی گاڑی کو نشانہ بنایا

 وزیر اعظم عمران خان نے عالمی برادری کو متنبہ کیا ہے کہ اگر کسی جھوٹے فلیگ آپریشن کی صورت میں ، ہندوستان نے کوئی کاروائی کی تو اس کو بھرپور جواب دیا جائے گا۔

اتوار کو دفتر خارجہ کے جاری کردہ  ایک بیان میں بتایا گیا کہ کنٹرول لائن کے ساتھ ساتھ بھارتی قابض افواج کی طرف سے سیز فائر کی خلاف ورزیوں پر پاکستان کے شدید احتجاج کو درج کرنے کے لئے ایک سینئر ہندوستانی سفارتکار کو دفتر خارجہ طلب کیا گیا تھا ، جس کے نتیجے میں ایک معصوم شہری شدید زخمی ہوگیا تھا۔

تفصیلات کے مطابق 

کنٹرول لائن کے رخچیری سیکٹر میں واقع گاؤں اخوری کو بھارتی فوج کی بلااشتعال اور بلا اشتعال فائرنگ کا سامنا کرنا پڑا جب محمد حنیف کی 25 سالہ بیٹی صغیرا شدید زخمی ہوگئیں۔ 

یہ بھی پڑھیں | طالبان سے مذاکرات کے دوران افغان شہریوں کی ہلاکتوں میں اضافہ، رپورٹ

وزیر اعظم خان نے اتوار کے روز ایک سلسلہ وار ٹویٹس میں کہا ہے کہ اقوام متحدہ کے واضح نشانوں اور اقوام متحدہ کے پرچم اڑانے کے باوجود بھارت کی یو این گاڑی پر دانستہ طور پر فائرنگ سے ظاہر ہوتا ہے کہ ریاست ہائے متحدہ کے قابل قبول طرز عمل اور بین الاقوامی قانون اور اقوام متحدہ کے احترام کے تمام بین الاقوامی اصولوں کو بھارت نظر انداز کرتا ہے۔ 

انہوں نے کہا کہ پاکستان نے اس بدمعاش رویے کی شدید مذمت کی ہے۔ 

وزیر اعظم نے مزید کہا کہ میں ایک بار پھر عالمی برادری کو خبردار کرنا چاہتا ہوں ، چونکہ ہندوستان اپنی داخلی پریشانیوں ، خاص طور پر بڑھتے ہوئے کسانوں کے احتجاج اور کوویڈ19 کی غلط فہمی کو حکومت پاکستان کے خلاف جھوٹا فلیگ آپریشن کرکے توجہ دوسری طرف کرنا چاہتا ہے۔

 میں پوری برادری کو بالکل واضح کر رہا ہوں کہ اگر بھارت نے پاکستان کے خلاف جھوٹے فلیگ آپریشن کا بہانہ کیا تو بھرپور جواب دیا جائے گا لہذا بھارت ایسی غلطی کرنے کا مت سوچے۔

حرمین رضا

جاویریہ حارث اردو خبر میں پاکستان میں مقیم مصنف اور سابق ایڈیٹر ہیں۔