مصنف کے بارے میں

صفحۂ اول

تبصرے

    پاکستان جو تک ایف اے ٹی ایف کی جانب سے گرے لسٹ میں رہے گا

    انسداد دہشت گردی کی عالمی نگران فنانشل ایکشن ٹاسک فورس نے جمعرات کو دہشت گردی سے نمٹنے کے 27 نکاتی ایکشن پلان پر مکمل طور پر عمل درآمد نہ کرنے کی وجہ سے پاکستان کو جون تک اپنی “گرے لسٹ” میں رکھنے کا فیصلہ کیا ہے۔

     یہ فیصلہ تین دن تک جاری رہنے والے ان لائن اجلاس کے بعد کیا گیا ہے۔ نجی نیوز نے رپوٹ کیا کہ ایف اے ٹی ایف کے صدر مارکس پلیر نے کہا کہ دہشت گردی کی مالی اعانت روکنے کے لئے پاکستان کی طرف سے ایک شدید کمی ہے۔

     انہوں نے کہا کہ پاکستان دہشت گردی کی مالی اعانت سے متعلق سنگین خامیاں باقی رہنے کے باعث نگرانی میں اضافہ کرے گا۔ جبکہ پاکستان نے اہم اقدامات اٹھائے ہیں  اس پر عملدرآمد کرنے کے لئے 27 ایکشن پوائنٹز میں سے تین اہم نکات باقی ہیں۔ انہوں نے مزید کہا کہ پاکستان ابھی تک اقوام متحدہ کے نامزد دہشت گردوں کے خلاف کارروائی نہیں کر رہا ہے۔ انہوں نے ملک سے جلد سے جلد اس پر کام کرنے کو کہا کیونکہ اس کی آخری تاریخ ختم ہوچکی ہے۔ 

    دہشت گردی کی مالی اعانت میں ملوث اداروں کے خلاف مالی پابندیوں سے متعلق پاکستان کو اب بھی جن نکات پر عمل کرنے کی ضرورت ہے۔ فنانشل ایکشن ٹاسک فورس نے کہا کہ پاکستان کو اپنی عملی منصوبے میں باقی تینوں آئٹموں پر عمل درآمد کرنے پر کام کرنا جاری رکھنا چاہئے تاکہ اس کی حکمت عملی سے اہم خامیوں کو دور کیا جاسکے۔ (1) یہ ظاہر کرنا کہدہشت گردی کی مالی اعانت کی تحقیقات اور قانونی چارہ جوئی ان افراد اور اداروں کو نشانہ بناتی ہے جن کی طرف سے یا نامزد افراد یا اداروں کی ہدایت پر کام کرتے ہیں۔ (2) یہ ظاہر کرنا کہ ٹی ایف کے خلاف قانونی کارروائی کے نتیجے میں موثر ، متناسب اور ناپائید پابندیاں عائد ہوتی ہیں۔ (3) تمام  نامزد دہشت گردوں ، خاص طور پر ان لوگوں کے لئے یا ان کی طرف سے کام کرنے والے افراد کے خلاف ٹارگٹڈ مالی پابندیوں کے موثر نفاذ کا مظاہرہ کرنا شامل ہے۔

    یہ بھی پڑھیں | پاکستان اور بھارت کا کنٹرول لائن پر سخت پابندیوں پر اتفاق، ڈی جی آئی ایس پی آر

     فنانشل ایکشن ٹاسک فورس واچ ڈاگ نے نوٹ کیا کہ پاکستان نے تمام ایکشن پلان آئٹموں میں نمایاں پیشرفت کی ہے اور 27 ایکشن آئٹمز میں سے 24 کو بڑے پیمانے پر خطاب کیا ہے۔ اس نے مزید کہا کہ چونکہ ایکشن پلان کی تمام تاریخوں کی میعاد ختم ہوچکی ہے ، ایف اے ٹی ایف نے پاکستان پر زور دیا ہے کہ وہ جون 2021 سے پہلے اپنا مکمل ایکشن پلان تیزی سے مکمل کرے۔

    یاد رہے کہ اکتوبر میں بھی ایف اے ٹی ایف نے پاکستان کو اپنی “گرے لسٹ” میں رکھنے کا فیصلہ کیا تھا۔ ایف اے ٹی ایف کی گرے لسٹ پر باقی رہنے سے پاکستان کو بین الاقوامی مالیاتی فنڈ ، ورلڈ بینک ، ایشین ڈویلپمنٹ بینک اور یوروپی یونین سے امداد حاصل کرنا مشکل بنائے گا۔ 

    جاویریہ حارث

    جاویریہ حارث اردو خبر میں پاکستان میں مقیم مصنف اور سابق ایڈیٹر ہیں۔

    سبسکرائب
    کو مطلع کریں
    guest
    0 Comments
    Inline Feedbacks
    View all comments
    0
    آپ اس متعلق کیا کہتے ہیں؟ اپنی رائے کمنٹ کریںx
    ()
    x