وزیر اعظم شہباز شریف آج پری-بجٹ کانفرنس سے خطاب کریں گے

وزیراعظم شہباز شریف (آج) منگل کو ایک روزہ ‘پری بجٹ بزنس کانفرنس’ سے خطاب کریں گے جس میں تمام اسٹیک ہولڈرز کے ساتھ اتفاق رائے پر مبنی معاشی اقدامات کی راہیں تلاش کی جائیں گی۔ 

وزیر اعظم کے ‘چارٹر آف اکانومی’ کے وژن اور ایک جامع اقتصادی پالیسی سازی کے نقطہ نظر کے مطابق، یہ کانفرنس ایک متحرک اور باہم بات چیت کے لیے ایک پلیٹ فارم پر مختلف شعبوں کے رہنماؤں کو اکٹھا کرے گی۔ 

 وزیر اعظم شہباز شریف ترقی کے لیے مضبوط بنیادوں کے ساتھ خوشحال معیشت کے لیے شرکاء کی جانب سے پیش کردہ سفارشات اور تجاویز کا جائزہ لیں گے۔ 

 کانفرنس میں وزیراعظم کے ایک ایسے پاکستان کے وژن پر توجہ مرکوز کی جائے گی جہاں لوگوں کے سماجی، سیاسی اور معاشی حقوق کو یقینی بنایا جائے۔ 

کانفرنس باہمی مشاورت کے ذریعے عوام کی معاشی کشمکش کو ختم کرنے اور قوم کو بہتر مستقبل کی راہ پر گامزن کرنے میں مدد فراہم کرنے کی کوشش کرے گی۔

دن بھر جاری رہنے والی، بامعنی اور اہم بات چیت میں زراعت، آئی ٹی، ٹیکسٹائل، مینوفیکچرنگ اور دیگر کئی کاروباری شعبوں سے تعلق رکھنے والے صنعت کاروں کو پیش کیا جائے گا۔

یہ بھی پڑھیں | آئی ایس آئی کو سرکاری بھرتیوں میں بڑا اختیار مل گیا 

کانفرنس کے شرکاء پاکستان کے موجودہ معاشی چیلنجز کا جائزہ لیں گے اور مختصر، درمیانی اور طویل مدتی حل وضع کریں گے۔ 

 یہ تقریب ایک متحرک معیشت کے ساتھ خوشحال پاکستان کے آگے بڑھنے کے راستے پر توجہ مرکوز کرے گی، جہاں ترقی پائیدار اور جامع ہو۔ 

اس میں سب کے لیے روزگار اور کاروباری مواقع کے اختیارات اور مواقع کا جائزہ لیا جائے گا تا کہ غربت کا خاتمہ ہو اور ہمارے تمام شہریوں کو ایک معقول معیار زندگی فراہم ہو۔

 یہ اقدام پورے تجارتی میدان میں مالی سال 2022-23 کے بجٹ کے لیے ان سیکٹر لیڈروں کی سفارشات کا بھی خیر مقدم کرے گا۔ 

 مذاکرات میں پاکستان کے معاشی چیلنجوں کے قلیل مدتی، درمیانی مدت اور طویل مدتی حل کی وضاحت کی جائے گی۔ کاروباری برادری کے اسٹیک ہولڈرز کے درمیان مشغولیت کے عمل کے ذریعے، یہ 2022-23 کے بجٹ کے لیے تجاویز بھی مرتب کرے گا۔

حرمین رضا

جاویریہ حارث اردو خبر میں پاکستان میں مقیم مصنف اور سابق ایڈیٹر ہیں۔

ہمارا نیوز لیٹر جوائن کریں
تازہ ترین آرٹیکلز، نوکریوں اور تفریحی خبریں ڈائریکٹ اپنے انباکس میں حاصل کریں
یہاں ایک لاکھ ستر ہزار سبسکرائبرز ہیں