نئی آڈیو سے متعلق سوال کا جواب مریم نواز گول کر گئیں

منگل کو مسلم لیگ ن کی نائب صدر مریم نواز کا ایک اور مبینہ آڈیو کلپ منظر عام پر آیا جس میں وہ اپنی ’میڈیا مینجمنٹ‘ کی تعریف کرتی نظر آتی ہیں۔ 

ٹویٹر پر گردش کرنے والے مختصر کلپ میں، مسلم لیگ (ن) کی رہنما مریم نواز نے مبینہ طور پر کہا کہ میری میڈیا مینجمنٹ کو دیکھو، جیو نیوز اور دنیا نیوز نے ان کو برباد کر دیا ہے۔ 

یہ واضح نہیں ہے کہ یہ کلپ کب ریکارڈ کیا گیا تھا اور وہ پانچ سیکنڈ کے کلپ میں کن واقعات کا حوالہ دے رہی تھیں۔ 

اس سے قبل مریم نواز کا کچھ ٹی وی چینلز کو اشتہارات دینے سے انکار کرنے کی ہدایات جاری کرنے کا ایک ایسا ہی آڈیو کلپ منظر عام پر آیا تھا، جسے انہوں نے تسلیم کیا تھا کہ وہ کلپس درست ہیں۔ 

 تاہم اس بار مسلم لیگ ن کی رہنما خاموش رہیں۔ اسلام آباد ہائی کورٹ کے باہر میڈیا سے بات کرتے ہوئے مریم نواز سے مبینہ آڈیو کلپ کے بارے میں پوچھا گیا کہ کیا یہ اصل میں ان کی ہے تو انہوں نے کہا کہ میں نے پہلے ہی اس کا جواب دیا ہے، اور واضح طور پر ایک جواب دیا ہے۔

یہ بھی پڑھیں | خیبر پختونخواہ: غلط امیدواروں کے انتخاب کی وجہ سے الیکشن ہارے، وزیر اعظم عمران خان

  جب رپورٹر نے ان سے سوال جاری رکھا تو مسلم لیگ (ن) کی ترجمان مریم اورنگزیب  نے کہا کہ بہت ہو گیا بھائی، وہ پہلے ہی سوال کا جواب دے چکی ہیں۔

 اس دوران مریم نواز نے رپورٹر کے بار بار پوچھے گئے سوال کو نظر انداز کرتے ہوئے صرف اتنا کہا: ’’میں اس کا جواب پہلے ہی دے چکی ہوں۔‘‘ 

 سماجی رابطے کی ویب سائٹ ٹوئٹر پر وزیر اطلاعات فواد چوہدری کا کہنا تھا کہ اپوزیشن لیڈر کے آڈیو کلپس نے ملکی میڈیا کے ڈھانچے کی خامیوں کو بے نقاب کردیا ہے۔ 

وزیر اطلاعات نے کہا کہ اگر ایسا میڈیا آزاد ہے، تو آزاد کیسا نظر آئے گا؟ میڈیا کی آزادی کو مافیاز نے اسیر کر رکھا ہے۔

 ڈیجیٹل میڈیا پر وزیر اعظم کے فوکل پرسن ارسلان خالد نے کہا کہ مریم نواز کی آڈیو مسلسل جیو نیوز اور دنیا نیوز پر مسلم لیگ ن کی جیب میں ہونے کا الزام لگا رہی ہیں۔ دونوں چینلز کی خاموشی شکوک و شبہات کو جنم دے رہی ہے۔ کیا ان چینلز سے وابستہ صحافی ہمیں بتانا پسند کریں گے کہ کیا یہ سب مریم نواز کے زیر انتظام ہیں؟”

 وزیراعظم کے معاون خصوصی برائے سیاسی رابطے ڈاکٹر شہباز گل نے کہا کہ نئی آڈیو ٹیپ کی روشنی میں دونوں چینلز کو اپنی پوزیشن واضح کرنے کی ضرورت ہے۔ انہوں نے کہا کہ مریم نواز کے ترجمان نے آڈیو کی تصدیق کر دی ہے۔ لہذا، ان اداروں کو اپنی پوزیشن واضح کرنی ہوگی۔

حرمین رضا

جاویریہ حارث اردو خبر میں پاکستان میں مقیم مصنف اور سابق ایڈیٹر ہیں۔

ہمارا نیوز لیٹر جوائن کریں
تازہ ترین آرٹیکلز، نوکریوں اور تفریحی خبریں ڈائریکٹ اپنے انباکس میں حاصل کریں
یہاں ایک لاکھ ستر ہزار سبسکرائبرز ہیں