لندن: شہباز شریف کی اپنے بھائی نواز شریف سے سیاسی موضوعات پر گفتگو

شہباز شریف کی نواز شریف سے ملاقات

وزیر اعظم شہباز شریف نے ملکہ برطانیہ الزبتھ دوئم کی آخری رسومات میں شرکت کے لیے لندن پہنچنے کے ایک روز بعد اتوار کو سابق وزیر اعظم اور پاکستان مسلم لیگ نواز (پی ایم ایل این) کے سربراہ نواز شریف سے ملاقات کی۔ 

 مسلم لیگ ن کے صدر شہباز نے اپنے بڑے بھائی سے اپنے بھتیجے حسین نواز کے دفتر میں ملاقات کی۔ ملاقات میں سابق وزیر خزانہ اسحاق ڈار، وزیر دفاع خواجہ آصف اور شہباز کے صاحبزادے سلیمان شہباز بھی موجود تھے۔

سیاسی اور معاشی صورتحال پر تبادلہ خیال

مسلم لیگ ن نے اپنے ٹویٹر ہینڈل پر کہا کہ دونوں رہنماؤں نے پاکستان کی موجودہ سیاسی اور معاشی صورتحال سمیت دیگر امور پر تبادلہ خیال کیا۔

تفصیلات کے مطابق شہباز شریف برطانوی حکومت کی دعوت پر ملکہ برطانیہ الزبتھ دوئم کی آخری رسومات میں شرکت کے لیے ہفتے کو رات گئے لندن پہنچے۔ ہوائی اڈے پر برطانوی سیکرٹری خارجہ کے خصوصی نمائندے ڈیوڈ گورڈن میک لیوڈ نے ان کا استقبال کیا۔ ترجمان دفتر خارجہ نے پریس ریلیز میں کہا کہ وزیراعظم جنازے میں شرکت کے بعد امریکا روانہ ہوں گے۔ 

یہ بھی پڑھیں |  پنجاب میں ن لیگی وفاقی وزراء کے خلاف دہشت گردی کے مقدمے

یہ بھی پڑھیں | شہباز شریف کے پاس پیسے مانگنے کے علاوہ کوئی پلان نہیں ہے، عمران خان

اقوام متحدہ جنرل اسمبلی سے خطاب

 وزیراعظم اقوام متحدہ کی جنرل اسمبلی (یو این جی اے) کے 77ویں اجلاس میں شرکت کے لیے 19 سے 23 ستمبر تک نیویارک جائیں گے۔ دورے کے دوران وہ 23 ستمبر کو جنرل اسمبلی سے خطاب کے علاوہ کئی عالمی رہنماؤں سے ملاقات کریں گے۔ 

فتر خارجہ کے مطابق وزیراعظم شہباز شریف پاکستان میں حالیہ موسمیاتی تباہ کن سیلابوں کے تناظر میں چیلنجز کو اجاگر کریں گے۔ انہوں نے کہا کہ وہ ماحولیاتی تبدیلی سے پیدا ہونے والے وجودی خطرے سے اجتماعی طور پر نمٹنے کے لیے ٹھوس تجاویز کا خاکہ پیش کریں گے۔

علاقائی اور عالمی مسائل پر پاکستان کے موقف

دفتر خارجہ کے ترجمان نے کہا کہ وزیراعظم تشویش کے علاقائی اور عالمی مسائل پر پاکستان کے موقف اور نقطہ نظر کا بھی اشتراک کریں گے جس میں کشمیر پر بھی بار ہو گی۔

 اقوام متحدہ کی جنرل اسمبلی کے اجلاس کے موقع پر، دفتر خارجہ نے کہا کہ وزیراعظم سی او پی-27 پر بند کمرے کے رہنماؤں کے اجتماع میں شرکت کریں گے جس میں موسمیاتی تبدیلی پر بات کرنے کے لیے منتخب عالمی رہنماؤں کو اکٹھا کیا جائے گا۔

“’عالمی فوڈ سیکیورٹی سمٹ‘ میں بھی شرکت”

 وہ افریقی یونین، یورپی یونین اور امریکہ کی جانب سے مشترکہ طور پر منعقد کیے جانے والے ’عالمی فوڈ سیکیورٹی سمٹ‘ میں بھی شرکت کریں گے۔ اس موقع پر وزیراعظم کے ہمراہ وزیر خارجہ بلاول بھٹو زرداری اور دیگر بھی ہوں گے۔

حرمین رضا

جاویریہ حارث اردو خبر میں پاکستان میں مقیم مصنف اور سابق ایڈیٹر ہیں۔