فیسبک کا امریکی صدارتی انتخابات کی مہم کا آغاز

فیسبک کی جانب سے رواں ہفتے ایک نیا اقدام شروع کیا جا رہا ہے جس کا مقصد امریکا میں ہونے والے صدارتی الیکشن میں ووٹ ڈالنے کے لئے لوگوں کو ترغیب دلانا ہے۔

 ٹیک ٹائٹن پیر کو ایک بڑے پیمانے پر مہم کا آغاز کرے گی جس میں لوگوں کو ووٹنگ کے اپنے  معلومات مراکز کا دورہ کرنے کی ترغیب دی جائے گی جہاں وہ تلاش کرسکتے ہیں کہ کیسے ووٹ ڈالنے کے لئے اندراج کرنا ہے ، میل کے ذریعے کیسے ووٹ ڈالیں گے یا انتخابی دن پولنگ اسٹیشنوں پر رضاکارانہ طور پر کیسے کام کریں گے۔

 صدارتی انتخابات کی مہم کو بڑے امریکی ٹیلی ویژن اور ریڈیو چینلز کے ساتھ ساتھ آن لائن نیوز آؤٹ لیٹس پر بھی نشر کیا جائے گا۔

 ہفتے کے روز سے ہی ، فیس بک نے اپنی ایپ پر اسی طرح کی معلومات شیئر کیں ، نیز انسٹاگرام اور میسنجر کے یوزرز کو بھی اس سے آگاہ کیا۔ سیلیکن ویلی دیو منگل کے روز ایک گھنٹہ تک جاری رہنے والے پروگرام کو “ووٹ اے تھون 2020” کے نام سے تیار کرنے کا بھی منصوبہ بنا رہا ہے۔ اس خصوصی پروگرام میں مشہور شخصیات اور عوامی شخصیات پیش ہوں گی اور لوگوں کو اندراج اور ووٹ ڈالنے کی تاکید کی جائے گی۔ 

فیس بک کے اندازہ کے مطابق وہ اب تک 25 لاکھ افراد کو ووٹ ڈالنے میں اندراج کرنے میں مدد فراہم کر چکا ہے۔

فہسبک زرائع کے مطابق وہ اس سال مزید 4 لاکھ سے زیادہ افراد کو ووٹ کے اندراج میں مدد فراہم کرنا چاہتا ہے لیکن فیسبک ووٹ ڈالنے کے لئے اپنی آواز کو استعمال کرنے میں مدد کرنے کے لئے جو پیشرفت کر چکا ہے اس سے خوش ہے۔

 فیس بک اور انسٹاگرام پر تقریبا 39 ملین افراد نے پہلے ہی ورچوئل ووٹنگ انفارمیشن مراکز کا دورہ کیا ہے۔ 

جاویریہ حارث

جاویریہ حارث اردو خبر میں پاکستان میں مقیم مصنف اور سابق ایڈیٹر ہیں۔

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *