عمران خان نے انضمام کے بعد مجھے پی ٹی آئی پنجاب کی کمان کی پیشکش کی ہے، پرویز الٰہی

پرویز الہی کو پنجاب صدر کے عہدے کی پیشکش

عمران خان کی پارٹی میں انضمام کے بعد پرویز الہی کو پنجاب صدر کے عہدے کی پیشکش

وزیر اعلیٰ پنجاب پرویز الٰہی نے بتایا ہے کہ ق لیگ کے ان کی پارٹی میں ضم ہونے کی صورت میں عمران خان نے انہیں پی ٹی آئی پنجاب کے صدر کے عہدے کی پیشکش کی ہے۔ 

تاہم، انہوں نے واضح کیا کہ ق لیگ کو ایسا کوئی بھی فیصلہ کرنے سے پہلے اپنے ووٹرز اور تنظیموں سے مشورہ کرنا ہوگا۔ 

پنجاب میں مسلم لیگ ق کے 10 ایم پی اے

 ایک تقریب میں میڈیا سے بات کرتے ہوئے وزیراعلیٰ پنجاب پرویز الہی نے کہا کہ پنجاب میں مسلم لیگ ق کے 10 ایم پی اے ہیں اور انہیں پہلے اپنے حلقوں کے لوگوں سے مشورہ کرنا ہوگا۔ ابھی تک اس حوالے سے کوئی فیصلہ نہیں کیا گیا۔

یہ بھی پڑھیں | پی ڈی ایم 35 سیٹوں پر الیکشن نہیں لڑے گی، مولانا فضل الرحمن

یہ بھی پڑھیں | مسلم لیگ ن نے پنجاب کے عبوری وزیر اعلیٰ کے لیے دو ناموں کا اعلان کر دیا

پرویز الٰہی نے مسلم لیگ کے صدر چوہدری شجاعت حسین کی جانب سے انہیں دیے گئے شوکاز نوٹس سے متعلق سوال کا جواب دیتے ہوئے کہا کہ عمران خان ان کے محسن ہیں جنہیں وہ کبھی نہیں بھول سکتے۔ لیکن ابھی تک انہوں نے انضمام پر کوئی فیصلہ نہیں کیا ہے. 

پی ٹی آئی رہنماؤں نے انضمام کے خیال کی مخالفت

علاوہ ازیں ذرائع کا کہنا ہے کہ پی ٹی آئی کے بیشتر سینئر رہنماؤں نے انضمام کے خیال کی مخالفت کی ہے۔ ان کا ماننا ہے کہ اس سے پارٹی کو شدید نقصان پہنچ سکتا ہے اور صرف ق لیگ کو فائدہ پہنچ سکتا ہے کیونکہ وہ اب بھی سمجھتے ہیں کہ تحریک انصاف اپنے بل بوتے پر الیکشن جیتنے کی صلاحیت رکھتی ہے۔ 

 اسی طرح پی ٹی آئی کے سینئر ارکان کا خیال ہے کہ عمران خان پر پہلے سے ہی نااہلی کا خطرہ منڈلا رہا ہے۔ انہیں ق لیگ کے ساتھ انضمام کی بجائے اپنی پارٹی کے سٹالورٹس پر بھروسہ کرنا چاہیے۔

 تاہم پارٹی کے سینئر رہنما شفقت محمود نے رابطہ کرنے پر اس تاثر کو زائل کیا اور کہا کہ اس معاملے پر کسی کو کوئی اعتراض نہیں ہے۔

حرمین رضا

حرمین رضا اردو خبر میں پاکستان میں مقیم مصنف اور سابق ایڈیٹر ہیں۔