مصنف کے بارے میں

صفحۂ اول

تبصرے

    سعودیہ عرب کا صرف ویکسن لگوانے والوں کو حج اور عمرہ کی اجازت دینے کا فیصلہ

    پیر کو سعودی عرب میں حکام نے اعلان کیا ہے کہ کورونا وائرس کے پھیلاؤ پر قابو پانے کے لئے رمضان کے مقدس مہینے کے دوران مکہ مکرمہ کی گرینڈ مسجد اور مدینہ منورہ میں مسجد نبوی میں صرف حفاظتی ٹیکے لگانے والے یا مدافعتی نمازیوں کو ہی عمرہ اور باقاعدہ نماز ادا کرنے کی اجازت دی جائے گی۔

     سعودی پریس ایجنسی (ایس پی اے) نے مملکت کی وزارت حج و عمرہ کے حوالے سے بتایا ہے کہ رمضان میں اجازت نامہ ان نمازیوں کو دیا جائے گا جن کو کوویڈ19 ویکسین کی دو خوراکیں پہلے ہی مل چکی ہیں یا جن لوگوں نے درخواست دینے سے 14 دن پہلے پہلی خوراک لی تھی۔

    یہ اجازت نامہ ان لوگوں کے لئے بھی ہے جو انفیکشن کے بعد ٹھیک ہوگئے ہیں۔ اس میں مزید کہا گیا ہے کہ اجازت نامہ وزارت کی ویب سائٹ پر دستیاب ایٹمارنا اور توکلکنا ایپس کے ذریعہ حاصل کیا جاسکتا ہے۔ 

    سعودی وزارت صحت نے بتایا کہ کورونا وائرس کی 5 ملین خوراکیں سعودی عرب میں دی گئیں ہیں۔ وزارت نے ایک بیان میں کہا کہ اب تک پوری ریاست میں 587 سے زائد ویکسی نیشن پوائنٹس میں 5 ملین سے زائد خوراکیں دی گئیں ہیں۔ 

    یہ بھی پڑھیں | آفتاب آفریدی پر سوات سے اسلام آباد جاتے ہوئے پشاور موٹر وے پر فائرنگ، قتل

    سعودی عرب نے 17 دسمبر کو جرمنی سے متعلق امریکی فائزر-بائیو ٹیک ٹیکوں کے استعمال سے ملک بھر میں ویکسینیشن مہم کا آغاز کیا۔ اس سے قبل ، سعودی عرب کے نائب وزیر حج و عمرہ ڈاکٹر عبد الفتاح مشہت نے کہا تھا کہ مزید عازمین حج کی استقبال کے لئے تیاریوں کا آغاز کردیا گیا ہے۔

    انہوں نے مزید کہا کہ مکہ مکرمہ کے داخلی راستوں پر چار استقبالیہ مراکز قائم کیے جائیں گے اور تقریبا 700  بسیں ان کی آمدورفت کے لئے مختص کی جائیں گی۔ ہر بس میں صحت کے ضوابط کے مطابق 20 حجاج کو لے کر جائیں گے۔

    جاویریہ حارث

    جاویریہ حارث اردو خبر میں پاکستان میں مقیم مصنف اور سابق ایڈیٹر ہیں۔

    سبسکرائب
    کو مطلع کریں
    guest
    0 Comments
    Inline Feedbacks
    View all comments
    0
    آپ اس متعلق کیا کہتے ہیں؟ اپنی رائے کمنٹ کریںx
    ()
    x