رانا شمیم کے طرز عمل سے عدالت کی بدنامی ہوئی، چارج شیٹ جاری

ہفتہ کو توہین عدالت کیس میں اسلام آباد ہائی کورٹ (آئی ایچ سی) کی جانب سے جاری کی گئی پانچ صفحات پر مشتمل چارج شیٹ میں کہا گیا ہے کہ گلگت بلتستان کے سابق چیف جج جسٹس (ر) رانا شمیم ​​نے عدلیہ کے خلاف “مضحکہ خیز الزامات” لگائے۔ 

چیف جسٹس اطہر من اللہ نے 20 جنوری کو رانا شمیم ​​پر فرد جرم عائد کی تھی۔

 چارج شیٹ میں کہا گیا ہے کہ سابق جج کے حلف نامے میں اسلام آباد ہائی کورٹ سمیت عدلیہ کے خلاف سنگین الزامات عائد کیے گئے ہیں، جو کہ عدالت کو نفرت، تضحیک اور توہین کی طرف لے جاتے ہیں اور عدالت کے سامنے زیر التوا کسی معاملے کے تعین کے لیے تعصب کا شکار ہیں۔ 

رانا محمد شمیم ​​نے نہ صرف صحافی انصار عباسی کو مذکورہ حلف نامہ مورخہ 10.11.2021 کو پھانسی دینے اور اس پر دستخط کرنے کی تصدیق کی بلکہ جان بوجھ کر عدالت میں آپ کے اس دعوے کے باوجود کہ یہ ایک پرائیویٹ دستاویزات تھیں، اسے شائع کرنے سے باز نہ آنے کا انتخاب کیا۔ 

یہ بھی پڑھیں | مانتا ہوں مہنگائی ہے،مشکل وقت ہے؛ وزیر اعظم عمران خان نے تسلیم کر لیا

نہ تو آپ نے صحافی انصار عباسی یا نوٹری پبلک کے خلاف رازداری کی خلاف ورزی کے لیے کوئی کارروائی شروع کی، اور نہ ہی مؤکل کے استحقاق کو مشورہ دیا، جس سے آپ کا عوامی سطح پر تضحیک کرنے اور  عدالت کے جج کو نقصان پہنچانے اور اس میں رکاوٹ ڈالنے کا ارادہ ظاہر ہوتا ہے۔

  انہوں نے کہا کہ رانا شمیم ​​مبینہ واقعے کے سنگین نتائج سے پوری طرح آگاہ تھا، اس کے باوجود آپ کا ضمیر تین سال سے زیادہ عرصے تک گہری نیند سویا رہا اور اچانک بیدار ہوا کہ صرف توہین آمیز حلف نامے پر عمل درآمد کیا جائے اور اشاعت سے قبل اس کی تصدیق کی جائے اور یہ سب اس یاد آیا  جب اپیل دائر کی گئی۔ 

دستاویز میں جن افراد کا ذکر کیا گیا ہے ان کی سماعت کی جا رہی ہے، جو عدالت کے وقار کو مجروح کرنے اور انصاف کی راہ کو موڑنے کا باعث بنتے ہیں۔ 

اپنے طرز عمل سے آپ قانون کے عمل اور زیر التواء عدالتی کارروائی میں مداخلت، رکاوٹ اور تعصب کا ارادہ رکھتے ہیں، اس طرح آپ نے اسلامی جمہوریہ کے آئین کے آرٹیکل 204(2) کے تحت اس عدالت کی توہین کا ارتکاب کیا ہے۔ 

 لہٰذا میں ہدایت کرتا ہوں کہ مذکورہ چارج پر اس عدالت کے ذریعے آپ پر مقدمہ چلایا جائے۔

حرمین رضا

جاویریہ حارث اردو خبر میں پاکستان میں مقیم مصنف اور سابق ایڈیٹر ہیں۔

ہمارا نیوز لیٹر جوائن کریں
تازہ ترین آرٹیکلز، نوکریوں اور تفریحی خبریں ڈائریکٹ اپنے انباکس میں حاصل کریں
یہاں ایک لاکھ ستر ہزار سبسکرائبرز ہیں