خیبر پختونخواہ میں کانگو وائرس کے چھ کیسز رپورٹ

محکمہ صحت کے حکام نے جمعہ کو بتایا کہ دارالحکومت پشاور سمیت صوبہ خیبرپختونخوا کے متعدد علاقوں میں کانگو وائرس کے چھ کیسز رپورٹ ہوئے ہیں۔

 صوبائی محکمہ صحت نے اپنی رپورٹ میں کہا ہے کہ لوئر کرم سے مزید دو مریض زیر علاج ہیں۔ 

رپورٹ کے مطابق، ایک افغان شہری، جو وائرس سے متاثر ہوا تھا، صحت یاب ہونے کے بعد ہسپتال سے فارغ کر دیا گیا ہے۔ 

پشاور سے تعلق رکھنے والے ایک مشتبہ مریض کے میڈیکل ٹیسٹ کے نتائج ابھی موصول نہیں ہوئے۔ 

رپورٹ میں کہا گیا کہ پشاور سے تعلق رکھنے والے ایک مشتبہ مریض کے میڈیکل ٹیسٹ کے نتائج ابھی موصول نہیں ہوئے۔ 

 اس میں مزید کہا گیا کہ اس بات کی تصدیق ہونا ابھی باقی ہے کہ آیا پشاور کے نواح میں متھرا گاؤں کا رہائشی، جو چند روز قبل انتقال کر گیا تھا، کو کانگو بخار تھا۔ رپورٹ میں مزید کہا گیا کہ مرنے والے مریضوں کے بھائی اور والد کی موت ایک ہی علامات سے ہوئی تھی۔ ان کے پڑوسیوں کو حیات آباد میڈیکل کمپلیکس میں ٹیسٹ کے لیے داخل کرایا گیا ہے جن کا انتظار ہے۔ 

 محکمہ لائیو سٹاک کے ڈائریکٹر جنرل کو بھی ایک خط بھیجا گیا ہے تاکہ متاثرہ مریضوں کے قریبی علاقوں میں مویشیوں کا معائنہ یقینی بنایا جا سکے۔

یہ بھی پڑھیں | الرٹ: پاکستان میں ایک دفعہ پھر کوویڈ کیسز میں اضافہ  

یہ بھی پڑھیں | عدالتی حکم: عامر لیاقت کے جسد خاکی کا پوسٹ مارٹم 23 جون کو شیڈیول   

 ڈسٹرکٹ ہیلتھ آفیسر کرم اور پشاور میں محکمہ صحت کے حکام کو متاثرہ مریضوں کے کانٹیکٹ ٹریسنگ کے حوالے سے آگاہ کر دیا گیا ہے۔ 

 رپورٹ میں کہا گیا ہے کہ کانگو وائرس کے حوالے سے لوگوں میں آگاہی کا آغاز کر دیا گیا ہے جبکہ تمام مراکز صحت کو بھی اس حوالے سے الرٹ کر دیا گیا ہے۔ 

 کریمین کانگو ہیمرجک فیور ایک وائرس ہے جو شدید وائرل ہیمرجک بخار کے پھیلنے کا سبب بنتا ہے۔ ورلڈ ہیلتھ آرگنائزیشن (ڈبلیو ایچ او) کے مطابق، اس طرح کے پھیلنے سے اموات کی شرح 40 فیصد تک ہے۔ 

یہ بنیادی طور پر ٹک اور مویشیوں کے جانوروں سے لوگوں میں منتقل ہوتا ہے۔ انسان سے انسان میں منتقلی متاثرہ افراد کے خون، رطوبتوں، اعضاء یا دیگر جسمانی رطوبتوں سے قریبی رابطے کے نتیجے میں ہو سکتی ہے۔ 

انسانوں یا جانوروں کے لیے اس کی کوئی ویکسین دستیاب نہیں ہے۔

حرمین رضا

جاویریہ حارث اردو خبر میں پاکستان میں مقیم مصنف اور سابق ایڈیٹر ہیں۔

ہمارا نیوز لیٹر جوائن کریں
تازہ ترین آرٹیکلز، نوکریوں اور تفریحی خبریں ڈائریکٹ اپنے انباکس میں حاصل کریں
یہاں ایک لاکھ ستر ہزار سبسکرائبرز ہیں