مصنف کے بارے میں

صفحۂ اول

خوشاب حلقہ پی پی 84 کے لئے ووٹنگ کا عمل جاری

پنجاب اسمبلی کے حلقہ پی پی 84 خوشاب میں ضمنی انتخاب کے لئے بیلٹنگ کا عمل جاری ہے۔ 

ووٹنگ کا عمل بغیر کسی وقفے کے آج شام 5 بجے تک جاری رہے گا۔ 

مسلم لیگ (ن) کے رکن قومی اسمبلی ملک محمد وارث کالو کی 12 مارچ کے کوویڈ19 سے انتقال کے بعد سرگودھا ڈسٹرکٹ سیٹ خالی ہوگئی تھی۔

حکومت نے تیاریوں کے ذریعہ 10 ٹیمیں تشکیل دیں جو نتائج کے اعلان تک انتخابی عمل کی نگرانی کریں گی۔ 

مسلم لیگ (ن) ، پی ٹی آئی، پیپلز پارٹی اور ٹی ایل پی انتخابات میں حصہ لینے والی جماعتوں میں شامل ہیں۔ 

ایک پولنگ اسٹیشن پر پی ٹی آئی اور مسلم لیگ (ن) کے کارکنوں کے مابین تصادم کی اطلاعات کے بعد ، الیکشن کمیشن آف پاکستان (ای سی پی) نے واقعے کا نوٹس لیتے ہوئے پولیس کو صورتحال کو سنبھالنے کی ہدایت کردی ہے۔

یہ بھی پڑھیں | این اے 249 میں پیپلرز پارٹی کی جیت، دیگر جماعتوں کا انتخابی نتائج ماننے سے انکار  

ای سی پی نے ایک بیان میں کہا کہ ڈی ایس پی انوسٹی گیشن نے جائے وقوع کا دورہ کیا اور صورتحال پر قابو پالیا۔

 پولنگ اسٹیشن پر امن و امان کی کوئی ناگوار صورتحال کی اطلاع نہیں ہے۔

صوبائی الیکشن کمشنر نے مزید کہا کہ پولنگ اسٹیشن پر ووٹنگ بلاتعطل جاری ہے۔ پی پی 84 ضمنی انتخابات میں  امیدوار سردار علی حسین خان بلوچ (پی ٹی آئی) ، معظم شیر کلو (مسلم لیگ ن) ، غلام حبیب احمد (پی پی پی) ، امجد رضا گجر (آزاد) اور ٹی ایل پی امیدوار  نے ووٹرز کو زور دیا کہ وہ آئیں اور اپنے حق کا استعمال کریں۔ 

فول پروف حفاظتی انتظامات کیے گئے ہیں اور رائے دہندگان کو کوویڈ19 ایس او پیز کی پابندی کرنی کی تلقین کی گئی ہے۔ کمشنر سرگودھا ڈویژن ڈاکٹر فرح مسعود اور ریجنل پولیس آفیسر (آر پی او) سرگودھا اشفاق خان نے پیر کو خوشاب ضلع کا دورہ کیا اور ضمنی انتخاب کے لئے حفاظتی انتظامات کا جائزہ لیا۔

 دونوں افسران نے روڈا میں ریٹرننگ آفیسر کے سب آفس کا دورہ کیا۔ ڈی سی خوشاب مسرت جبین اور ڈی پی او خوشاب محمد نوید بھی موجود تھے۔ آر پی او نے ڈی پی او اور ڈی سی کو ہدایت کی کہ وہ پورے حلقہ بھر میں انتخابات کی سیکیورٹی اور ہموار انعقاد کو یقینی بنائے اور پولنگ بوتھس پر بیلٹ بکس اور دیگر انتخابی سامان کی محفوظ فراہمی کو یقینی بنائے۔ 

انہوں نے الیکشن کمیشن کے جاری کردہ تمام معیاری آپریٹنگ طریقہ کار (ایس او پیز) کے عمل پر بھی زور دیا۔ 

ضمنی رائے شماری 229 پولنگ اسٹیشنوں میں ہوگی ، جس میں 666 پولنگ بوتھس ہوں گے۔ کل رجسٹرڈ ووٹرز کی تعداد 292،687 ہے جن میں سے 155،104 مرد اور 137،583 خواتین ہیں۔

حرمین رضا

جاویریہ حارث اردو خبر میں پاکستان میں مقیم مصنف اور سابق ایڈیٹر ہیں۔