جانئے کس سیاستدان نے کتنا ٹیکس دیا؟

فیڈرل بورڈ آف ریونیو (ایف بی آر) نے سال 2018 کے لئے پاکستان کے منتخب نمائندوں کی ایک ٹیکس ڈائرکٹری شائع کی ہے جس سے یہ ظاہر ہوتا ہے کہ کس سیاستدان نے 2018 میں کتنا ٹیکس دیا۔ 

ایف بی آر کی جاری کردہ رپورٹ کے مطابق سابق وزیر اعظم اور مسلم لیگ (ن) کے رہنما شاہد خاقان عباسی نے سب سے زیادہ ٹیکس 241،329،362 روپے ادا کیا۔

اس کے علاوہ سابق صدر اور پیپلز پارٹی کے چیئر پرسن آصف علی زرداری نے 2،891،455 روپے ادا کیے جبکہ پیپلز پارٹی کے چیئرمین بلاول بھٹو زرداری نے ٹیکسوں میں 294،117 روپے ادا کیے۔ 

سابق وزیراعلیٰ پنجاب اور مسلم لیگ (ن) کے صدر شہباز شریف نے 9،730،545 روپے ادا کیے۔ شہباز شریف کے بیٹے حمزہ نے 8،705،368 روپے ٹیکس ادا کیے۔ 

تفصیلات کے مطابق وزیر اعظم عمران خان نے 282،449 روپے ادا کیے۔ چاروں صوبائی وزرائے اعلیٰ میں ، سب سے زیادہ رقم بلوچستان کے جام کمال نے 4،808،948 روپے میں ادا کی ، جبکہ سندھ کے مراد علی شاہ نے 1،022،184 اور خیبر پختونخوا کے محمود خان نے 235،982 روپے ادا کیے۔ وزیراعلیٰ پنجاب عثمان بزدار نے اس عرصے میں کوئی ٹیکس ادا نہیں کیا۔ 

اسی سال 2018 کے لئے دوسرے منتخب نمائندوں کی ٹیکس کی ادائیگی مندرجہ ذیل ہے۔

وزیر اطلاعات و نشریات شبلی فراز نے 367،460 روپے ادا کیے۔

وزیر انسانی حقوق ڈاکٹر شیریں مزاری نے 2،435،650 روپے ادا کیے۔

 وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی نے 183،900 روپے ادا کیے۔

 وزیر داخلہ اعجاز احمد شاہ نے 58،120 روپے ادا کیے۔

 وزیر دفاع پرویز خٹک نے 1،826،899 روپے ادا کیے۔

 وزیر قانون فرغ نسیم نے 35،135،459 روپے ادا کئے۔

 وزیر منصوبہ بندی اسد عمر نے 5،346،342 روپے ادا کئے۔

وزیر ہوا بازی غلام سرور خان نے 1،046،669 روپے ادا کیے۔

وزیر ریلوے شیخ رشید احمد نے 579،011 روپے ادا کئے۔

 منشیات کنٹرول کے وزیر اعظم خان سواتی نے 590،916 روپے ادا کئے۔

 وزیر بجلی عمر ایوب خان نے 26،055،517 روپے ادا کئے۔

 اسٹیٹس اینڈ فرنٹیئر ریجنز وزیر شہریار آفریدی نے 183،900 روپے ادا کیے۔

کشمیر اور گلگت بلتستان کے امور کے وزیر علی امین گنڈا پور نے 378763 روپے ادا کیے۔

 مواصلات اور ڈاک کی خدمات کے وزیر مراد سعید نے 3 لاکھ 74 ہزار 730 روپے ادا کیے۔

قومی فوڈ سیکیورٹی اور ریسرچ منسٹر فخر امام نے 5،212،137 روپے ادا کیے۔

وزیر صنعت و پیداوار برائے حماد اظہر نے 22،445 روپے ادا کیے۔

 وزیر تعلیم شفقت محمود نے 231،730 روپے ادا کیے۔

۔ اقتصادی امور کے وزیر خسرو بختیار نے 624،292 روپے ادا کیے

سمندری امور کے وزیر علی حیدر زیدی نے 896،191 روپے ادا کیے۔

۔ آئی ٹی اور ٹیلی مواصلات کے وزیر امین الحق نے 66،749 روپے ادا کیے

۔ قومی اسمبلی کے اسپیکر اسد قیصر نے 557،730 روپے ادا کیے

۔ سینیٹ کی چیئرپرسن صادق سنجرانی نے 1،363،414 روپے ادا کیے

 سینیٹ کے نائب چیئرپرسن سلیم مانڈوی والا نے 1،591،722 روپے ادا کیے۔

 پارلیمانی امور کے ریاستی وزیر علی محمد خان نے 430،695 روپے ادا کئے۔

جاویریہ حارث

جاویریہ حارث اردو خبر میں پاکستان میں مقیم مصنف اور سابق ایڈیٹر ہیں۔

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *