بلاول بھٹو نے حکومت کو لانگ مارچ سے متعلق خبردار کر دیا

پاکستان پیپلز پارٹی کے چیئرمین بلاول بھٹو زرداری نے عمران خان کو 27 فروری کے لانگ مارچ سے خبردار کرتے ہوئے کہا ہے کہ وہ عوام کے پاس جا کر بتائیں گے کہ ملک کو ان سے نجات دلانا بہت ضروری ہے۔ انہیں اب پارلیمنٹ میں نہیں رہنا چاہئے کیونکہ وہ عوام کا اعتماد کھو چکے ہیں۔

این اے 92 سے پی ٹی آئی کے سابق ٹکٹ ہولڈر پیر صاحبزادہ نعیم الدین سیالوی کی اپنے ساتھیوں سمیت پیپلز پارٹی میں باضابطہ شمولیت کے موقع پر سیال شریف میں بڑے عوامی اجتماع سے خطاب کرتے ہوئے بلاول بھٹو نے کہا کہ شہید ذوالفقار علی بھٹو نے ہمیں پارٹی کے لیے چار اصول دیے اور شہید محترم بےنظیر نے ایک اور اضافہ کیا۔

 انہوں نے کہا کہ اسلام ہمارا دین ہے، جمہوریت ہماری سیاست ہے، مساوات ہماری معیشت ہے، تمام اختیارات عوام کو اور شہادت ہمارا نصب العین ہے، پانچ اصول ہیں۔ انہوں نے پیر صاحبزادہ نعیم الدین سیالوی کو شہداء کی جماعت میں خوش آمدید کہا۔

یہ بھی پڑھیں | سینیٹ میں اپوزیشن کو ایک ووٹ سے شکست؛ سٹیٹ بینک بل پاس

 چیئرمین پی پی پی نے کہا کہ شہید ذوالفقار علی بھٹو اور شہید محترمہ بے نظیر بھٹو نے اس پارٹی کو معصوموں کی آواز بنا کر انہیں ان کا حق دلایا۔ انہوں نے جنرل ایوب، جنرل ضیاء اور جنرل مشرف جیسے آمروں کا سامنا کیا۔ اب ہم اس کٹھ پتلی عمران خان کو ہٹانے کے لیے کراچی سے مارچ کا آغاز کریں گے اور اپنے مطالبات اسلام آباد میں سب کے سامنے رکھیں گے۔ 

انہوں نے کہا کہ موجودہ حکومت نے تبدیلی کے نام پر ملک کو تباہ کر دیا ہے۔ ہم جانتے ہیں کہ آئی ایم ایف کے ساتھ معاہدہ عوام کے مفاد میں نہیں کیونکہ اس سے ہماری خودمختاری پر سمجھوتہ ہوتا ہے۔

 انہوں نے مزید کہا کہ اس معاہدے کا خمیازہ عوام کو برداشت کرنا پڑ رہا ہے۔ عمران خان اپنے تمام وعدوں سے مکر گئے ہیں خواہ وہ دس کروڑ نوکریاں ہوں یا پچاس لاکھ گھر۔ وزیر اعظم نے لوگوں کو بے روزگار کیا اور تجاوزات کی آڑ میں بے گھر بھی کیا۔ انہوں نے مزید کہا کہ معاشرے کا ہر طبقہ اس منتخب حکومت کے خلاف احتجاج کر رہا ہے۔ 

بلاول بھٹو نے کہا کہ ہم نے کسانوں سے اظہار یکجہتی کے لیے ملک بھر میں کسان مارچ کئے۔ ہمارے کاشتکاروں کو یوریا کے تھیلے کے لیے ایک ستون سے دوسری پوسٹ تک پھینک دیا جاتا ہے۔ کاشتکاروں کو ان کی فصلوں کی مناسب امدادی قیمتیں نہیں دی جاتیں۔ اس کٹھ پتلی نے ملک کی زراعت کو تباہ کر دیا ہے جو ہماری معیشت میں ریڑھ کی ہڈی کی حیثیت رکھتی ہے۔

حرمین رضا

جاویریہ حارث اردو خبر میں پاکستان میں مقیم مصنف اور سابق ایڈیٹر ہیں۔

ہمارا نیوز لیٹر جوائن کریں
تازہ ترین آرٹیکلز، نوکریوں اور تفریحی خبریں ڈائریکٹ اپنے انباکس میں حاصل کریں
یہاں ایک لاکھ ستر ہزار سبسکرائبرز ہیں