ایم کیو ایم کا عدالتی کمیشن سے سندھ میں پانی کی قلت کی تحقیقات کا مطالبہ

متحدہ قومی موومنٹ پاکستان (ایم کیو ایم پی) کے شہریوں کو شہری سندھ خصوصا کراچی میں پانی کی قلت کے معاملے پر بات کرنے کی اجازت نہ دینے پر سندھ اسمبلی کے اسپیکر پر تنقید کرتے ہوئے ، ایم کیو ایم نے جمعہ کو سندھ ہائیکورٹ کے چیف جسٹس سے مطالبہ کیا کہ گذشتہ 13 سالوں کے دوران سندھ حکومت کی بدعنوانی اور شہری سندھ میں پانی کی فراہمی اور تقسیم کے امور کی تحقیقات کے لئے انکوائری کمیشن بنائی جائے۔

تفصیلات کے مطابق ایک بیان میں ، ایم کیو ایم کے ترجمان نے کہا ہے کہ اسپیکر کا دفتر غیرجانبدارانہ ہے۔ انہوں نے مزید کہا کہ سندھ اسمبلی کے متولی ہونے کے ناطے ، ایوان میں سب کو شامل کرنا ان کی ذمہ داری ہے۔ لیکن افسوس کی بات یہ ہے کہ گذشتہ 13 سالوں کے دوران سندھ اسمبلی کے اسپیکروں کا طرز عمل اس بات کا اشارہ ہے کہ سندھ اسمبلی دیہی سندھ کی نمائندہ ہے اور اس کا شہری سندھ کے مسائل سے کوئی لینا دینا نہیں ہے۔ پارٹی اپنے نمائندوں کی درخواستوں کو سننے کے لئے تیار ہے۔

یہ بھی پڑھیں | وزیر اعظم عمران خان کو بڑے دعوے کرنے کی عادت ہے، بلاول بھٹو 

 ایم کیو ایم کے ترجمان نے مزید کہا کہ پارٹی کے اراکین اسمبلی نے ہفتے کے روز سندھ کے شہری علاقوں خصوصا  کراچی کے پانی کے معاملات پر ایک حل پر بات چیت کرنے کی اجازت طلب کی تھی ، کیونکہ وہ حکومت کی توجہ اس اہم مسئلے کی طرف مبذول کروانا چاہتے تھے ، لیکن اسپیکر نے انہیں روک دیا۔

 ایسا لگتا ہے کہ حکومت شہری سندھ کے باشندوں کی بہتری کے لئے کسی قانون سازی میں دلچسپی نہیں رکھتی ہے اور اسپیکر کو بھی اس میں کوئی دلچسپی نہیں ہے۔

 ایم کیو ایم نے الزام لگایا کہ سندھ اسمبلی میں تمام قانون سازی شہری سندھ پر دیہی سندھ کے تسلط یا صوبائی حکومت کی لوٹ مار اور بدعنوانی کو مستقل کرنے اور مستحکم کرنے کے لئے بنائی گئی ہے اور اس دوران میں ، سندھ کے شہری علاقوں ، خاص طور پر کراچی ، بنیادی سہولیات سے محروم ہیں اور پانی کی ایک ایک بوند کو ترس رہے ہیں۔ 

پارٹی نے مطالبہ کیا کہ چیف جسٹس سندھ حکومت کی جانب سے گذشتہ 13 سالوں میں ہونے والی بدعنوانی ، اور شہری سندھ میں پانی کی فراہمی اور تقسیم کے نظام کی تحقیقات کے لئے ایک کمیشن تشکیل ہونی چاہیے۔ 

جمعہ کو سندھ اسمبلی میں اپوزیشن کے احتجاج پر شدید احتجاج کرتے ہوئے وزیر تعلیم سعید غنی نے کہا کہ ایم کیو ایم اور پاکستان تحریک انصاف کے ایم پی اے نے چہرے بچانے کی حکمت عملی کے طور پر احتجاج کا سہارا لیا۔

 انہوں نے یہ بات کراچی میں پانی کے بحران پر اپوزیشن کے ارکان اسمبلی کی طرف سے بھر پور احتجاج کے باعث ایوان کو ملتوی ہونے کے فوری بعد سندھ اسمبلی کے باہر میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے کہی۔

جاویریہ حارث

جاویریہ حارث اردو خبر میں پاکستان میں مقیم مصنف اور سابق ایڈیٹر ہیں۔

سبسکرائب
کو مطلع کریں
guest
0 Comments
Inline Feedbacks
View all comments
0
آپ اس متعلق کیا کہتے ہیں؟ اپنی رائے کمنٹ کریںx
()
x