اپوزیشن آج گوجرانوالہ میں پاور شو کرے گی

پاکستان جمہوری تحریک (پی ڈی ایم) کی رہنما جماعتیں جناح اسٹیڈیم کو اپنے حامیوں سے بھرنے کے لئے حکومت کے خلاف اپنا پہلا عوامی اجتماع آج گوجرانوالہ میں منعقد کریں گی۔ 

وزیر اطلاعات شبلی فراز نے اپوزیشن جماعتوں کو چیلینج کیا تھا کہ وہ عوام کو سڑکوں پر پریشان کرنے کے بجائے اس کے حامیوں کے ساتھ اسٹیڈیم کو بھریں۔ اس کے جواب میں مسلم لیگ (ن) نے وفاقی وزیر سے کہا کہ اگر اسٹیڈیم بھت گیا تو استعفی دے دیں۔ جے یو آئی (ف) کے سربراہ مولانا فضل الرحمن ، مریم نواز اور بلاول بھٹو سمیت اپوزیشن کے اعلی رہنما اسٹیڈیم میں شرکاء سے خطاب کریں گے۔

یاد رہے کہ حال ہی میں بنی پی ڈی ایم نے وزیر اعظم عمران خان کی “منتخب” حکومت کو ختم کرنے کے لئے اگلے دو ماہ میں بڑے شہروں میں احتجاجی ریلیاں نکالنے کا اعلان کیا ہے۔

 تفصیلات کے مطابق پی ڈی ایم کے سربراہ مولانا فضل الرحمن جامعہ اشرفیہ سے گوجرانوالہ تک جے یو آئی-ایف کے قافلے کی قیادت کریں گے جبکہ پارٹی کے کارکنوں اور حامیوں کو ہدایت کی گئی ہے کہ وہ جلسہ گاہ تک براہ راست پہنچیں۔ 

پیپلز پارٹی کے چیئرمین بلاول بھٹو جمعرات کے روز گجرات میں قمر زمان کائرہ کی رہائش گاہ پہنچے جہاں انہوں نے جلسے کے انتظامات کا جائزہ لیا۔ اطلاعات کے مطابق ، وہ دن کے آخر میں وہاں سے پیپلز پارٹی کے کارکنوں کو اسٹیڈیم میں لے کر جائیں گے۔ 

 مسلم لیگ (ن) کی نائب صدر مریم نواز نے شریف خاندان کی جاتی عمرہ رہائش گاہ پر منعقدہ اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ پارٹی قائدین اور کارکن گرفتاریوں سے خوفزدہ نہیں ہیں اور وہ تمام رکاوٹوں اور گرفتاریوں کے باوجود جمعہ کے روز گوجرانوالہ کے جلسے میں بڑھ چڑھ کر حصہ لیں گی۔

 کارکنوں کی گرفتاریوں کی مذمت کرتے ہوئے مریم نواز نے کہا کہ مسلم لیگ (ن) گرفتاری سے انہیں ڈرانے کے حکومتی حربوں سے خوفزدہ نہیں ہے۔ انہوں نے مزید کہا کہ انشاء اللہ ہماری تحریک کامیاب ہوگی اور گوجرانوالہ کا جلسہ ایک زبردست مظاہرہ ہوگا۔ 

دوسری جانب مسلم لیگ (ن) کے سینئر رہنما رانا ثناء اللہ نے کہا کہ جی ڈی روڈ بلاک کرنے کی دھمکی کے بعد ہی پی ڈی ایم کو گوجرانوالہ میں ریلی نکالنے کی اجازت دی گئی ہے۔ انہوں نے حکومت سے مطالبہ کیا کہ چھاپوں اور کارکنوں کی گرفتاریوں کو روکا جائے۔ مریم نواز کے نظام الاوقات کا اعلان کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ وہ جمعہ کی نماز کے بعد جاتی عمرہ سے روانہ ہوں گی اور شام 6 بجے کے لگ بھگ گوجرانوالہ اسٹیڈیم پہنچیں گی۔

 انہوں نے کہا کہ مسلم لیگ ن اور پی ڈی ایم کی قیادت نے جناح اسٹیڈیم کو بھرنے کے لئے شبلی فراز کا چیلنج قبول کرلیا ہے۔ عوامی نیشنل پارٹی (اے این پی) کے رہنما افتخار حسین نے پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ حکومت کو ہٹانا اور ملک میں آزادانہ اور منصفانہ انتخابات کا انعقاد ہمارا سب سے بڑا مطالبہ ہے۔ ہم اس مطالبے کی تکمیل تک اپنی جدوجہد جاری رکھیں گے۔ 

شئر کریں

جاویریہ حارث

جاویریہ حارث اردو خبر میں پاکستان میں مقیم مصنف اور سابق ایڈیٹر ہیں۔

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *