اٹھائیس اگست کے پاک انڈیا میچ کے بعد انگلینڈ میں فساد

پاک بھارت میچ کے بعد برطانیہ میں کشیدگی

پاکستان اور بھارت کے درمیان ایشیا کپ کرکٹ میچوں کے بعد برطانیہ کے مشرقی لیسیسٹر میں کشیدگی بڑھ رہی ہے۔ یہ علاقہ دو ہمسایہ جنوبی ایشیائی ممالک سے تعلق رکھنے والی ایک بڑی ڈائیسپورا کمیونٹی کا گھر ہے، جو کرکٹ میں ایک دوسرے کے سخت حریف ہیں۔ 

لیسٹر شائر پولیس نے دو گروپوں کے درمیان تصادم اور غیر منصوبہ بند مظاہروں کے بعد ‘بد نظمی’ پیدا کرنے کے الزام میں 15 افراد کو گرفتار کر لیا۔ 

افراد پولیس کی حراست میں

پولیس نے کہا کہ یہ کمیونٹیز کو نقصان اور پریشانی کو کم کرنے کے لیے کیا گیا ہے۔ تمام 15 افراد پولیس کی حراست میں ہیں۔ 

 سوشل میڈیا پر مسجد پر حملے کی افواہوں کے منظر عام پر آنے کے بعد ہفتے کی رات احتجاج شروع ہوا۔ لیکن لیسٹر شائر پولیس نے یہ کہتے ہوئے ان قیاس آرائیوں کو مسترد کر دیا تھا کہ ہم نے سوشل میڈیا پر ایسی اطلاعات دیکھی ہیں کہ ایک مسجد پر حملہ کیا جا رہا ہے۔ زمین پر موجود افسران نے تصدیق کی ہے کہ یہ سچ نہیں ہے۔ براہ کرم سوشل میڈیا پر صرف وہی معلومات شیئر کریں جو آپ جانتے ہو کہ یہ سچ ہے۔

“پرتشدد انتشار پھیلانے کی سازش”

 ہفتے کی رات اور اتوار کی صبح ہونے والے مظاہروں کے بعد اس سے قبل دو افراد کو گرفتار کیا گیا تھا۔ جب کہ ایک شخص کو پرتشدد انتشار پھیلانے کی سازش کے شبے میں حراست میں لیا گیا تھا جبکہ دوسرے کو بلیڈ مواد رکھنے کے الزام میں حراست میں لیا گیا تھا۔ 

شہر میں سنگین بدامنی پر قابو پانے کے لیے ایک اور پولیس آپریشن کیا گیا جس کے نتیجے میں اتوار کے روز 15 گرفتار ہوئے۔ 

ہندو مسلم فسادات

 متحدہ عرب امارات میں ایشیا کپ 2022 میں ہندوستان اور پاکستان کے درمیان تصادم کے بعد سب سے پہلے تشدد اور مظاہرے پھوٹ پڑے۔ لیسٹر میں ہندو اور مسلم کمیونٹیز اس گیم کے بعد تصادم میں آگئیں جس کے نتیجے میں زبردست انتشار پیدا ہوا۔ جب سے سوشل میڈیا پر قیاس آرائیوں کی وجہ سے علاقے میں کشیدگی بڑھ رہی ہے۔

 سوشل میڈیا پر ویڈیوز منظر عام پر آئی ہیں جن میں نوجوانوں کے ایک گروپ کو علاقے میں ایک ہندو مندر میں توڑ پھوڑ کی کوشش کرتے ہوئے دکھایا گیا ہے۔ ہفتہ اور اتوار کو شہر بھر میں تشدد اور نقصان کے متعدد واقعات کی اطلاعات موصول ہوئی ہیں جس میں لیسٹر شائر پولیس نے حالات کو قابو میں لانے کے لیے مزید افسران کو تعینات کیا ہے۔ ۔

یہ بھی پڑھیں |  محمد حفیظ کی شعیب ملک کو پاکستانی ٹیم میں شامل نا کرنے پر تنقید

یہ بھی پڑھیں | پی سی بی کا شاہین آفریدی سے متعلق شاہد آفریدی کو جواب

پندرہ گرفتاریوں کے بعد جاری ہونے والے ایک بیان میں، لیسٹر شائر پولیس نے کہا کہ یہ کمیونٹیز کو نقصان اور پریشانی کو کم سے کم کرنے کے لیے کیا گیا ہے۔ تمام پندرہ افراد پولیس کی حراست میں ہیں۔ 

پولیس نے ایک بیان میں کہا کہ افسروں کو شہر کے نارتھ ایونگٹن علاقے میں اتوار کی دوپہر کو نوجوانوں کے جمع ہونے والے گروہوں کے بارے میں علم ہوا۔ افسران نے ان سے بات کی اور کمیونٹیز کو پہنچنے والے نقصان اور پریشانی کو کم کرنے کے لیے ایک عارضی پولیس کا گھیرا لگانے سمیت اقدامات کیے۔

ہندوستان اور پاکستان کی ٹیمیں دو بار آمنے سامنے ہوئیں

حال ہی میں ختم ہونے والے ایشیا کپ کرکٹ ٹورنامنٹ میں ہندوستان اور پاکستان کی ٹیمیں دو بار آمنے سامنے ہوئیں۔ جہاں 28 اگست کو گروپ مرحلے کے مقابلے میں ہندوستان نے پاکستان سے سبقت حاصل کی جبکہ پاکستان نے اگلے ہفتے ان کے درمیان سپر فور میٹنگ میں اپنے روایتی حریفوں کو شکست دی۔ پاکستان نے ٹورنامنٹ کے فائنل میں جگہ بنائی لیکن سری لنکا کے خلاف شکست کے بعد ٹرافی سے محروم ہو گیا۔

حرمین رضا

جاویریہ حارث اردو خبر میں پاکستان میں مقیم مصنف اور سابق ایڈیٹر ہیں۔