مصنف کے بارے میں

صفحۂ اول

امارات نے افغان خاندانوں کی میزبانی اور سماجی دیکھ بھال شروع کر دی

ابو ظہبی کے ولی عہد اور متحدہ عرب امارات کی مسلح افواج کے ڈپٹی سپریم کمانڈر شیخ محمد بن زاید النہیان کی ہدایات کے تحت متحدہ عرب امارات نے افغان خاندانوں بالخصوص خواتین اور بچوں کی سماجی مدد کے ساتھ میزبانی شروع کر دی ہے اور ان کی فراہمی کے لیے تمام ضروری اقدامات کئے جارہے ہیں۔

  شیخ محمد کا یہ اقدام افغان خاندانوں کی حفاظت اور وقار کو بڑھانے کے لیے بنایا گیا ہے۔ یہ متحدہ عرب امارات کی جانب سے متعدد ممالک اور غیر سرکاری تنظیموں کو اپنے حکام اور معاون عملے بشمول افغان شہریوں کو متحدہ عرب امارات کے ہوائی اڈوں کے ذریعے بحفاظت نکالنے کے لیے امداد اور پروازوں کی سہولت فراہم کرنے کے پس منظر میں ہوا ہے۔

یہ بھی پڑھیں | روپیہ دو سال کی بلند ترین قیمت پر آ گیا 

 اس سلسلے میں متحدہ عرب امارات نے اپنے قومی طیاروں اور ہوائی اڈوں کا استعمال کرتے ہوئے 39،827 افغانیوں اور غیر ملکی شہریوں کو افغانستان سے نکالنے میں سہولت فراہم کی ہے۔ 

متحدہ عرب امارات کی جانب سے افغانستان میں حالیہ پیش رفت کی روشنی میں کی جانے والی انسانی اور امدادی کوششیں شیخ محمد کے بتائے ہوئے اصولوں کی عکاسی کرتی ہیں جو کہ بحران کے وقت عالمی تعاون اور یکجہتی پر مبنی ہیں۔

حرمین رضا

جاویریہ حارث اردو خبر میں پاکستان میں مقیم مصنف اور سابق ایڈیٹر ہیں۔