الیکشن کمیشن نے عمران خان کے پارٹی ہیڈ  کے طور پر الیکشن پر اعتراضات اٹھا دئیے  

 پاکستان کے الیکشن کمیشن (ای سی پی) نے سابق وزیر اعظم عمران خان کے پاکستان تحریک انصاف (پی ٹی آئی) کے چیئرمین منتخب ہونے پر اعتراض اٹھایا ہے۔

انٹرا پارٹی انتخابات پر سات اعتراضات اٹھائے ہیں

تفصیلات کے مطابق الیکٹورل واچ ڈاگ نے پاکستان تحریک انصاف (پی ٹی آئی) کے انٹرا پارٹی انتخابات پر سات اعتراضات اٹھائے ہیں۔ اس سلسلے میں پارٹی کو نوٹس بھی جاری کر دیا گیا ہے۔

 نوٹس میں ای سی پی نے کہا کہ انٹرا پارٹی الیکشن ترمیم شدہ آئین کے تحت نہیں ہوئے۔ ذرائع نے اے آر وائی نیوز کو بتایا کہ پی ٹی آئی نے انہیں پارٹی چیئرمین بنانے کے لیے پارٹی آئین میں ترمیم کی۔ 

یہ بھی پڑھیں | سندھ کی صورتحال 2010 کے سیلاب سے زیادہ خطرناک ہے، وزیر اعلی سندھ

یہ بھی پڑھیں | پاکستان کو پیٹرول کی قیمتیں زیادہ کیوں رکھنی ہیں؟ عاطف میاں نے بتا دیا

الیکشن کمیشن نے پی ٹی آئی کو ہدایت کی ہے کہ وہ قومی کونسل کی دو تہائی اکثریت کے ساتھ آئین میں ترمیم کر کے انتخابات کرائے۔ ۔۔۔ جون کے شروع میں، عمران خان ایک بار پھر پاکستان تحریک انصاف (پی ٹی آئی) کے چیئرمین کے طور پر بلا مقابلہ منتخب ہو گئے تھے جب دو پینل ان کے حق میں دستبردار ہو گئے تھے۔ عمران خان کا انتخاب اسلام آباد میں پی ٹی آئی کی نیشنل کانفرنس کے اجلاس میں ہوا۔ 

 پی ٹی آئی رہنمائوں عمر سرفراز چیمہ اور نیک محمد کی قیادت میں دو پینل انتخابات سے دستبردار ہوگئے تھے جس کے بعد سابق وزیراعظم بلامقابلہ منتخب ہوگئے۔

حرمین رضا

جاویریہ حارث اردو خبر میں پاکستان میں مقیم مصنف اور سابق ایڈیٹر ہیں۔