الرٹ: پاکستان میں ایک دفعہ پھر کوویڈ کیسز میں اضافہ

کوویڈ19 کیسز کی تعداد میں ایک دفعہ پھر اضافہ

پاکستان میں کوویڈ19 کیسز کی تعداد میں ایک دفعہ پھر اضافہ ہو رہا ہے۔ صرف پچھلے پانچ دنوں کے دوران مثبتیت کی شرح میں تقریباً 2 فیصد کا اضافہ دیکھنے میں آیا ہے۔ کراچی سب سے زیادہ متاثرہ شہر ہے۔

 نیشنل انسٹی ٹیوٹ آف ہیلتھ، اسلام آباد کے تازہ ترین اعداد و شمار کے مطابق، ملک میں ایک ہی دن میں کوویڈ19 کے 309 نئے کیسز رپورٹ ہوئے ہیں جس سے مثبتیت کی شرح 2.22 فیصد تک پہنچ گئی ہے۔

تفصیلات کے مطابق 13,941 ٹیسٹ کرنے پر تازہ کیسز کا پتہ چلا 

دریں اثنا، 80 مریض اس وقت ملک بھر میں مختلف طبی سہولیات میں انتہائی نگہداشت والے یونٹوں میں زیر علاج ہیں۔ تاہم گزشتہ 24 گھنٹوں کے دوران کورونا وائرس سے کسی کی موت نہیں ہوئی ہے۔

مزید یہ کہ، سندھ میں مثبتیت کی شرح 6.1 فیصد تک پہنچ گئی ہے جبکہ صرف کراچی میں 15.85 فیصد مثبتیت ریٹ ہے۔

 جمعرات کے بعد سے شہر کی مثبتیت کی شرح میں بڑی کمی کے باوجود – جب یہ 21.23 فیصد تھی — کراچی اب بھی ملک کا سب سے زیادہ متاثرہ شہر ہے۔ 

 این آئی سی کے اعدادوشمار کے مطابق، ملک کا دوسرا سب سے زیادہ متاثرہ شہر مردان ہے جس میں 4.76 فیصد کوویڈ19 مثبتیت کی شرح ہے۔

یہ بھی پڑھیں | عدالتی حکم: عامر لیاقت کے جسد خاکی کا پوسٹ مارٹم 23 جون کو شیڈیول  

یہ بھی پڑھیں | کوویڈ۱۹: کراچی میں مثبت کیسز کی شرح 21 فیصد سے تجاوز کر گئی  

محکمہ صحت سندھ کو سختی کا حکم 

  کوویڈ19 کی چھٹی لہر کے بڑھتے ہوئے خدشات کی وجہ سے، محکمہ صحت سندھ نے کراچی اور حیدرآباد کے کمشنرز کو لکھے گئے خط میں تشویش کا اظہار کیا ہے۔ 

 ‘پاکستان میں کوویڈ19 کی تعداد ایک بار پھر بڑھ رہی ہے’

 محکمہ صحت نے کمشنروں کو ہدایت کی کہ وہ دونوں شہروں میں کوویڈ19 ایس او پیز پر سختی سے عمل درآمد کو یقینی بنائیں۔ 

 ایس او پیز میں ماسک پہننا، سماجی دوری، ویکسینیشن کارڈز چیک کرنا اور پبلک ٹرانسپورٹ کو 70 فیصد تک محدود کرنا شامل ہیں۔ 

 محکمہ صحت نے کوویڈ19 کی ذیلی اقسام بی-اے-5 اور بی-اے-4 کے پھیلنے کا خدشہ ظاہر کیا ہے۔

حرمین رضا

جاویریہ حارث اردو خبر میں پاکستان میں مقیم مصنف اور سابق ایڈیٹر ہیں۔

ہمارا نیوز لیٹر جوائن کریں
تازہ ترین آرٹیکلز، نوکریوں اور تفریحی خبریں ڈائریکٹ اپنے انباکس میں حاصل کریں
یہاں ایک لاکھ ستر ہزار سبسکرائبرز ہیں