مصنف کے بارے میں

صفحۂ اول

تبصرے

    اسرائیل سے خفیہ ملاقات کو پاکستانی حکام نے مسترد کر دیا

    پاکستان کے قومی سلامتی کے مشیر (این ایس اے) ڈاکٹر معید یوسف نے ان دعوؤں کی سختی سے تردید کی ہے جس میں دعویٰ کیا گیا ہے کہ انہوں نے خفیہ طور پر اسرائیلی حکام سے ملاقات کی ہے۔ 

    تفصیلات کے مطابق این ایس اے کی طرف سے یہ وضاحت اس وقت سامنے آئی ہے جب دفتر خارجہ کے بیان میں اسرائیلی میڈیا کی اس خبر کی تردید کی گئی تھی کہ انہوں نے گذشتہ نومبر میں تل ابیب کا دورہ کیا تھا اور موساد کے سربراہ سے ملاقات کی تھی۔ 

    یہ جان کر بہت مایوسی ہوئی کہ ایک بڑی سیاسی جماعت کے رہنما نے یہ سمجھا ہے کہ میں نے خفیہ طور پر اسرائیلی حکام سے ملاقات کی ہے۔ مجھے واضح طور پر اور ریکارڈ پر یہ بتانے دیں کہ میں نے کسی اسرائیلی عہدیداروں سے ملاقات نہیں کی ہے اور نہ ہی میں اسرائیل گیا ہوں۔

     انہوں نے کہا کہ وزیر اعظم نے اپنے مؤقف میں یہ بات بالکل واضح کردی ہے کہ پاکستان فلسطینیوں کے محض دو ریاستی حل کے حق پر قائم رہے گا۔ باقی سب سازشی تھیوری ہیں۔ 

    یہ بھی پڑھیں | میرا مقصد فوج کے خلاف بات کرنا نہیں تھا، حامد میر نے رجوع کر لیا

     پیر کو بیرون ملک مقیم پاکستانیوں کے وزیر اعظم کے سابق معاون خصوصی زلفی بخاری اور دفتر خارجہ نے ان خبروں کی تردید کی تھی کہ انہوں نے ایک اہم شخص کے پیغام کو بھیجنے کے لئے خفیہ طور پر اسرائیل کا دورہ کیا تھا۔ انہوں نے کہا کہ میں اسرائیل نہیں گیا۔ حیرت انگیز بات یہ ہے کہ پاکستانی اخبار کا کہنا ہے کہ میں اسرائیلی نیوز سورس کے مطابق اسرائیل گیا تھا اور اسرائیلی مقالے میں کہا گیا ہے کہ میں پاکستانی ذرائع کے مطابق اسرائیل گیا تھا- 

     زلفی بخاری نے میڈیا رپورٹس کو مسترد کرتے ہوئے ٹویٹ کیا کہ حیرت ہے کہ یہ خیالی پاکستانی ذریعہ کون ہے۔ 

    دوسری جانب دفتر خارجہ نے زلفی بخاری کے دورہ اسرائیل سے متعلق اطلاعات کو بھی مسترد کردیا ہے۔

     دفتر خارجہ کے ترجمان زاہد حفیظ چودھری نے کہا ہے کہ یہ اطلاعات بے بنیاد اور گمراہ کن ہیں۔ اسرائیل کا ایسا کوئی دورہ نہیں کیا گیا ہے۔

     انہوں نے میڈیا کو یہ بھی بتایا کہ زلفی بخاری نے بھی اس رپورٹ کو مسترد کردیا ہے۔ ترجمان نے یہ بھی کہا کہ دفتر خارجہ نے بھی پچھلے سال 18 دسمبر کو اسی طرح کی غلط خبروں کو مسترد کردیا تھا۔

     یاد رہے کہ ایک دن پہلے ہی ، اسرائیلی مقالہ اسرائیل ہائوم نے دعوی کیا تھا کہ بخاری لندن سے اسرائیل گئے تھے۔ اس رپورٹ میں دعوی کیا گیا ہے کہ بخاری اسرائیل کے بین گوریون ہوائی اڈے پر پہنچے اور بعد میں انہیں تل ابیب پہنچا دیا گیا۔

    جاویریہ حارث

    جاویریہ حارث اردو خبر میں پاکستان میں مقیم مصنف اور سابق ایڈیٹر ہیں۔

    سبسکرائب
    کو مطلع کریں
    guest
    0 Comments
    Inline Feedbacks
    View all comments
    0
    آپ اس متعلق کیا کہتے ہیں؟ اپنی رائے کمنٹ کریںx
    ()
    x