ابھی ٹینکوں کے آگے لیٹنے کی کوئی ضرورت نہیں ہے، عمران خان کا ورکرز سے خطاب

عمران خان نے اسلام آباد میں ’’ملکی تاریخ کا سب سے بڑا جلسہ‘‘ کرنے کا اعلان

 پاکستان تحریک انصاف (پی ٹی آئی) کے چیئرمین عمران خان نے اسلام آباد میں ’’ملکی تاریخ کا سب سے بڑا جلسہ‘‘ کرنے کا اعلان کرتے ہوئے کارکنوں سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ ابھی ٹینکوں کے آگے لیٹنے کی ضرورت نہیں ہے۔

بدھ کے روز ورکرز کنونشن سے خطاب کرتے ہوئے ایک کارکن نے پی ٹی آئی چیئرمین کو اونچی آواز میں مخاطب کرتے ہوئے کہا کہ خان صاحب ہم بھی ٹینکوں کے آگے لیٹ جائیں گے، آپ حکم دیں۔ 

سابق وزیراعظم نے جواب دیا کہ ہمیں ابھی اس کی ضرورت نہیں، ہمیں اس وقت اپنی قوم کی خواتین اور نوجوانوں کی ضرورت ہے۔ 

تیس سال سے ہم پر چور مسلط ہیں اور ان کو مسلط کرنے والوں نے انہیں ہمارے حق میں اچھے فیصلے کرنے کے لیے نہیں لایا، بلکہ ہمیں اپنی غلامی میں لا کھڑا کیا ہے۔

 عمران خان نے کہا کہ وزیر اعظم شہباز شریف نے وفاقی تحقیقاتی ادارے (ایف آئی اے) اور قومی احتساب بیورو (نیب) کو ماتحت کرنے کے بعد 1100 ارب روپے ختم کرنے کے لیے نیب قانون میں ترمیم کی۔ موجودہ حکومت نے اقتدار میں آتے ہی کرپشن کیسز اور نیب کو ختم کر دیا ہے۔

یہ بھی پڑھیں | لاہور ہائیکورٹ نے حمزہ شہباز الیکشن کیس کی سماعت دوبارہ شروع کر دی

یہ بھی پڑھیں | اسحاق ڈار کو نیا پاکستانی پاسپورٹ مل گیا

 اب صورت حال یہ ہے کہ ملک میں تاریخی مہنگائی تھی، ہر جگہ اشیاء کی قیمتیں ڈرامائی طور پر بڑھ چکی تھیں اور معیشت تباہ ہو چکی تھی اور ’مزید مہنگائی ہو گی۔

 سابق وزیراعظم نے سوال اٹھایا کہ کیا وجہ تھی کہ ہماری (پی ٹی آئی) کی حکومت کا تختہ الٹ دیا گیا اور چوروں کو اقتدار دیا گیا۔

 آج لوگ کہہ رہے ہیں کہ پاکستان قرضوں کی قسطیں ادا نہیں کر سکے گا اور نادہندہ ہو جائے گا۔ انہوں نے کہا کہ موجودہ حکومت بین الاقوامی مالیاتی فنڈ کے نقش قدم پر چل رہی ہے اور مہنگائی کی حمایت میں سامنے آئی ہے۔ 

 انہوں نے پی ٹی آئی کی خواتین اور دیگر کارکنوں سے کہا کہ وہ لوگوں کے دروازے پر جائیں، دستک دیں اور بتائیں کہ ان کے لیے گھر سے نکلنا کتنا ضروری ہے۔ لوگوں کو بتائیں کہ یہ ذمہ داری صرف عمران خان کی نہیں بلکہ قوم کی بھی ہے۔

حرمین رضا

حرمین رضا اردو خبر میں پاکستان میں مقیم مصنف اور سابق ایڈیٹر ہیں۔