مصنف کے بارے میں

صفحۂ اول

آنے والے ہفتے میں روپے کے مقابلے ڈالر کی قیمت مستحکم رہے گی.

ممکنہ طور پر اگلے ہفتے ڈالر کے مقابلے میں ڈالر کے مقابلے میں مستحکم رہنے کا امکان ہے جو قرضوں کی سیکیوریٹیوں میں بہتری اور آمدنی کی ادائیگیوں کے لئے غیر ملکی کرنسی کی سست مانگ کی وجہ سے ہے۔

اسٹیٹ بینک آف پاکستان (ایس بی پی) کے مطابق ، 1 جولائی 2019 سے 23 جنوری 2020 کے دوران غیر ملکی شرکاء نے مارکیٹ ٹریژری بل (ایم ٹی بی) اور پاکستان انویسٹمنٹ بانڈ (پی آئی بی) میں 2.571 بلین ڈالر کی سرمایہ کاری کی۔

متوقع شرح منافع کی وجہ سے قرضوں کی سیکیوریٹیز میں آمد میں اضافے کا امکان ہے۔ اسٹیٹ بینک اگلے دو ماہ کے لئے 28 جنوری 2020 کو پالیسی کی شرح کا اعلان کرنے والا ہے۔ موجودہ پالیسی شرح 13.25 فیصد ہے ، اور مہنگائی کے دباؤ کو دیکھتے ہوئے ، مرکزی بینک کو کسی بھی نیچے کی نظر ثانی کا جائزہ لینے کا امکان نہیں ہے۔

چین میں کورونویرس پھیلنے کی وجہ سے گرین بیک کا مطالبہ بھی سست رہ سکتا ہے۔ پاکستان چینی مصنوعات کے بڑے خریداروں میں شامل ہے۔ صحت و مشورے کے نتیجے میں اس وباء کے سبب ، درآمد کنندہ چینی درآمدات کے لئے ڈالر کی خریداری میں محتاط رہ سکتے ہیں۔

اس کے علاوہ ، معیشت میں سست روی اور حالیہ بجٹ میں حکومت کی جانب سے اٹھائے جانے والے اقدامات کی وجہ سے پاکستان کا درآمدی بل پہلے ہی کم ہونا شروع ہوگیا ہے۔

جولائی تا دسمبر (2019/20) کے دوران ملک کا درآمدی بل 16.9 فیصد گر کر 23.23 ارب ڈالر رہ گیا ہے ، جبکہ گذشتہ مالی سال کے اسی عرصے میں 27.95 بلین ڈالر کے مقابلے میں۔

اس سے ملک کو تجارتی خسارے کو 30 فیصد تک کم کرنے میں مدد ملی۔ رواں مالی سال کی پہلی ششماہی میں تجارتی خسارہ کم ہوکر 11.69 بلین ڈالر رہ گیا جبکہ اس کے مقابلے میں گذشتہ مالی سال کے اسی نصف حصے میں 16.77 بلین ڈالر کا خسارہ تھا۔

ملک کے زرمبادلہ کے بڑھتے ہوئے ذخائر سے آئندہ دنوں میں مقامی یونٹ کو مستحکم رہنے میں بھی مدد مل سکتی ہے۔ اسٹیٹ بینک آف پاکستان کے پاس موجود زرمبادلہ کے ذخائر 10 جنوری تک بڑھ کر 11.586 بلین ڈالر ہوگئے جو ایک ہفتہ قبل 11.503 ڈالر تھا۔

فنانشل ایکشن ٹاسک فورس (ایف اے ٹی ایف) میں پاکستان کی حیثیت سے متعلق مثبت اطلاعات پر آئندہ ہفتے کے دوران مقامی کرنسی بھی منتقل ہوسکتی ہے۔ کچھ اطلاعات میں کہا گیا ہے کہ چین بیجنگ ، چین میں منعقدہ ورکنگ گروپ کے اجلاس میں ایف ٹی اے ایف کی ’گرے لسٹ‘ سے نکل آئے گا۔

ہفتے کے دوران (20 سے 24 جنوری) روپیہ شروع ہونے کے بعد تین پیسے بڑھ گیا
انٹربینک غیر ملکی زرمبادلہ مارکیٹ میں ڈالر کے مقابلے میں ہفتے کے اختتام 154.59 روپے پر 154.56 روپے پر ہوگا۔

پاکسیدیلی سے متعلق مزید خبریں پڑھیں: https://urdukhabar.com.pk/category/national/

ثاقب شیخ۔