مصنف کے بارے میں

صفحۂ اول

پی ڈی ایم جماعتوں کا مقصد حکومت گرانا نہیں ہے، بلاول بھٹو

پاکستان پیپلز پارٹی (پی پی پی) کے چیئرمین بلاول بھٹو زرداری نے کہا ہے کہ پاکستان ڈیموکریٹک موومنٹ (پی ڈی ایم) ، جو درجن بھر اپوزیشن جماعتوں کا اتحاد ہے ، کا  حکومت کے خلاف موقف غیر سنجیدہ” ہے۔ 

سندھ کے ضلع سکھر میں ایک پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے بلاول بھٹو نے کہا کہ وہ [پی ڈی ایم کے طور ہر] عثمان بزدار [وزیراعلیٰ پنجاب] کو ہٹانے پر راضی نہیں ہیں اور یہاں تک کہ انہوں نے کہا ان کا مقصد نا ہی وزیر اعظم عمران خان یا ان کی حکومت کو ہٹانا ہے۔ 

بلاول بھٹو نے کہا کہ تمام سیاسی جماعتوں کو اپنے طریقے سے سیاست کرنے کا حق ہے لیکن اگر وہ ہماری حکمت عملی کو قبول کرتے تو حکومت کو گرانے کے لیے یہ بہترین طریقہ ہوتا۔ انہوں نے مزید کہا کہ پی ڈی ایم سے حکمران جماعت کو سب سے زیادہ فائدہ ہوا ہے۔ 

بلاول بھٹو نے اس سال مارچ میں سینیٹ اپوزیشن لیڈر کے انتخاب کا ذکر کیا جس میں پیپلز پارٹی کے یوسف رضا گیلانی کو پارلیمنٹ کے ایوان بالا میں اپوزیشن لیڈر مقرر کیا گیا تھا۔  انہوں نے کہا کہ ہم انہیں صرف راستہ دکھا سکتے ہیں۔ ہم نے قومی اسمبلی میں اپنی طاقت کو ثابت کیا اور اگر مسلم لیگ (ن) نے ہمیں پنجاب میں نہیں چھوڑا تو ہم وہاں کی حکمران جماعت کو بھی ایک دھچکا پہنچا سکتے ہیں۔ 

یہ بھی پڑھیں | ٹوکیو پارلیمپکس گولڈ میڈل پاکستانی حیدر علی ، تاریخ رقم کے نام پر پہلی بار

 ایک سوال کے جواب میں بلاول بھٹو نے کہا کہ کل کراچی میں پی ڈی ایم پاور شو زیادہ کامیاب ہوتا اگر وہ خواتین کو جلسہ عام میں شرکت کی اجازت دیتے۔ 

دوسری طرف پی ڈی ایم کے سربراہ مولانا فضل الرحمان نے ان خبروں کی تردید کی کہ انہوں نے خواتین کو جلسوں میں شرکت سے منع کیا تھا۔

 کئی میڈیا رپورٹس میں دعویٰ کیا گیا کہ پی ڈی ایم کی اتوار کی ریلی میں خواتین کی شرکت بہت کم تھی۔ اس سے قبل مسلم لیگ (ن) کے صدر شہباز شریف نے دعویٰ کیا تھا کہ پی ٹی آئی کی قیادت والی حکومت کو ملکی تاریخ میں اسٹیبلشمنٹ کی بے مثال حمایت حاصل ہے۔

 شہباز شریف کے یہ ریمارکس اس وقت سامنے آئے جب انہوں نے کراچی کے دورے کے دوران مزار قائد کا دورہ کیا۔ انہوں نے کہا کہ عوام کے منتخب کردہ امیدواروں کو ان کی خدمت کا موقع دیا جانا چاہیے۔ مسلم لیگ (ن) کے سربراہ نے یہ بھی کہا کہ موجودہ حکومت ناا ہے۔ “وہ ایک چور دروازے کے ذریعے اقتدار میں آئے ہیں۔ 

حرمین رضا

جاویریہ حارث اردو خبر میں پاکستان میں مقیم مصنف اور سابق ایڈیٹر ہیں۔