مختلف سیلیبریٹیز کا کوہ پیما علی سد پارہ کو خراج تحسین

 طور پر موت کی تصدیق کر دی گئی ہے۔ کوہ پیماؤں کے اہل خانہ کا کہنا ہے کہ وہ کوہ پیماؤں کی وفات کی تصدیق کرتے ہیں۔

تفصیلات کے مطابق کوہ پیما علی سدپارہ کی وفات کا باضابطہ اعلان ان کے بیٹے ساجد سدپارہ نے کیا جس سے ہر کوئی دکھ میں مبتلا ہو گیا۔ تاریخ کے سب سےبڑے سرچ اور ریسکیو آپریشن کے بعد بھی ان کوہ پیماؤں کو تلاش نہیں کیا جا سکا ہے۔ 

 ساجد سد پارہ کی جانب سے موت کی تصدیق کئے جانے کے بعد بہت سارے افراد،جن میں مشہور شخصیات شامل ہیں، نے سوشل میڈیا پر علی سد پارہ کو ایک ہیرو کے طور پر خراج تحسین پیش کیا۔ 

یہ بھی پڑھیں | ساجد سد پارہ نے کوہ پیما علی سد پارہ کی موت کی تصدیق کر دی

ہمایوں سعید ، حمزہ علی عباسی ، آشنا شاہ ، وینا ملک و دیگر نے صدپارہ کے لئے تعزیت کی۔ ان کے الفاظ کچھ یوں تھے: “علی سدپارہ کو ہمیشہ ہمارے قومی ہیرو کی حیثیت سے یاد رکھا جائے گا۔” جوانی پھر نہیں آنی کے اسٹار نے لکھا کہ پہاڑوں کے ساتھ ان کی محبت کی داستان ، اس کا شوق اور بہادری بہت سے لوگوں کو متاثر کرتی رہے گی۔ انہوں نے ان کے اہل خانہ اور جون سنوری اور جوان پابلو کے اہل خانہ سے تعزیت بھی کی۔

 حمزہ علی عباسی نے بھی اسی طرح کے خیالات کا اظہار کرتے ہوئے لکھا کہ اللہ پاکستان کے ہیرو علی سدپارہ اور دیگر لوگوں کو جو اس دنیا سے رخصت ہوئے ان کی روح کو سلامت رکھے۔ اداکار اور میزبان وینا نے ٹویٹر پر شیئر کیا کہ اللہ انہیں جنت میں اعلی مقام عطا کرے اور علی سدپارہ کے چاہنے والوں کو صبر جمیل عطا کرے۔ 

مشہور ٹیلی ویژن میزبان شائستہ نے بھی مرحوم کے ایتھلیٹ کو خراج عقیدت پیش کیا اور لکھا کہ پہاڑوں کا عظیم بیٹا علی سدپارہ دنیا کے دوسرے سب سے اونچے پہاڑ پر ہمیشہ کے لئے ہو گیا ہے۔ 

 علی۔ ظفر نے فیس بک پر خراج تحسین پیش کرتے ہوئے لکھا کہ کوئی بھی قوم اپنے ہیروز کو پہچاننے اور منانے کے بغیر ترقی نہیں کر سکتی۔ علی سدپارہ ایسے ہی غیر منقول ہیرو تھے جنہوں نے اپنی پوری زندگی وقف کردی اور اپنے ملک کے لئے غیرمعمولی کامیابیوں کو انجام دینے کے لئے جان کا خطرہ مول لیا۔  میں نے ان کے لئے موسیقی اس لئے گائی کہ وہ ہماری یادوں میں جکڑے رہیں۔ 

یاد رہے کہ محمد علی سدپارہ ، آئس لینڈ کے جان سنوری سیگورجنسن اور چلی کے جان پابلو مہر پریتو 5 فروری کو کے 2 پر لاپتہ ہوگئے  تھے جبکہ وہ بغیر کسی اضافی آکسیجن کے موسم سرما مین کے تو سر کرنے کی مہم پر تھے۔

جاویریہ حارث

جاویریہ حارث اردو خبر میں پاکستان میں مقیم مصنف اور سابق ایڈیٹر ہیں۔

سبسکرائب
کو مطلع کریں
guest
0 Comments
Inline Feedbacks
View all comments
0
آپ اس متعلق کیا کہتے ہیں؟ اپنی رائے کمنٹ کریںx
()
x