سال 2023 میں انڈیا کی آبادی چائنہ سے بڑھ جائے گی

بھارت 2023 میں دنیا کے سب سے زیادہ آبادی والے ملک کے طور پر چین کو پیچھے چھوڑ جائے گا۔

اقوام متحدہ کی ایک رپورٹ نے پیر کو خبردار کیا ہے کہ یہ زیادہ زرخیزی اقتصادی ترقی کو چیلنج کرے گی۔

عالمی یوم آبادی کے موقع پر جاری کردہ رپورٹ میں کہا گیا ہے کہ دنیا کی آبادی، اس سال 15 نومبر تک 8 بلین تک پہنچنے کا تخمینہ ہے جبکہ 2030 میں 8.5 بلین اور 2100 میں 10.4 بلین تک پہنچ سکتی ہے، کیونکہ اموات کی رفتار میں کمی آئی ہے۔

سال 2011 میں ہندوستان کی آبادی 1.21 بلین تھی جو دہائی میں ایک بار گنتی کی جاتی ہے۔ حکومت نے کوویڈ19 کی وجہ سے 2021 کی مردم شماری کو موخر کر دیا تھا۔

اقوام متحدہ کے اندازوں سے پتہ چلتا ہے کہ دنیا کی آبادی 1950 کے بعد اپنی سب سے سست رفتار سے بڑھ رہی تھی جو 2020 میں 1 فیصد سے کم ہو گئی تھی۔

یہ بھی پڑھیں | ڈی جی نیب شہزاد سلیم کا طیبہ گل کو 100 ملین ہرجانے کا نوٹس

سال2021 میں، دنیا کی آبادی کی اوسط زرخیزی زندگی بھر میں فی عورت 2.3 پیدائش رہی جو کہ 1950 میں تقریباً 5 پیدائشوں سے کم ہو گئی ہے۔ سال 2050 تک عالمی زرخیزی مزید کم ہو کر 2.1 فی عورت تک پہنچنے کا امکان ہے۔

اقوام متحدہ کے سکریٹری جنرل انتونیو گوٹیرس نے ایک بیان میں کہا کہ یہ ہمارے تنوع کو منانے، ہماری مشترکہ انسانیت کو پہچاننے، اور صحت کے شعبے میں ہونے والی پیشرفت پر تعجب کرنے کا موقع ہے جس نے عمر میں اضافہ کیا ہے اور زچگی اور بچوں کی اموات کی شرح میں ڈرامائی طور پر کمی کی ہے۔

عالمی ادارہ صحت کی ایک سابقہ ​​رپورٹ کا حوالہ دیتے ہوئے -جنوری 2020 اور دسمبر 2021 کے درمیان کوویڈ 19 وبائی امراض سے متعلق تقریباً 14.9 ملین اموات کا تخمینہ لگاتے ہوئے، اقوام متحدہ کی رپورٹ میں کہا گیا ہے کہ پیدائش کے وقت عالمی متوقع عمر 2019 میں 72.8 سال سے کم ہو کر 2021 میں 71 سال رہ گئی ہے۔

اقوام متحدہ نے کہا ہے کہ 2050 تک عالمی آبادی میں متوقع اضافے کا نصف سے زیادہ حصہ آٹھ ممالک – جمہوری جمہوریہ کانگو، مصر، ایتھوپیا، بھارت، نائیجیریا، پاکستان، فلپائن اور تنزانیہ میں مرکوز ہو گا۔

سب صحارا افریقہ کے ممالک 2050 تک متوقع اضافے میں نصف سے زیادہ حصہ ڈالیں گے۔

تاہم، 2022 اور 2050 کے درمیان 61 ممالک کی آبادی میں 1 فیصد یا اس سے زیادہ کمی متوقع ہے، جس کی وجہ زرخیزی میں کمی ہے۔

حرمین رضا

جاویریہ حارث اردو خبر میں پاکستان میں مقیم مصنف اور سابق ایڈیٹر ہیں۔

ہمارا نیوز لیٹر جوائن کریں
تازہ ترین آرٹیکلز، نوکریوں اور تفریحی خبریں ڈائریکٹ اپنے انباکس میں حاصل کریں
یہاں ایک لاکھ ستر ہزار سبسکرائبرز ہیں