براڈشیٹ انکشافات سے حکمران طبقے کی بدعنوانی کا انکشاف ہوا، وزیر اعظم عمران خان

وزیر اعظم عمران خان نے آج کہا ہے کہ برطانیہ میں مقیم فرم براڈشیٹ کے انکشافات نے ایک بار پھر ہمارے حکمران طبقے کی بدعنوانی اور بڑے پیمانے پر منی لانڈرنگ کو بے نقاب کردیا ہے۔

 ٹویٹس کی ایک سیریز میں وزیر اعظم نے کہا کہ پانامہ پیپرز کے ذریعہ انہی لوگوں کو پہلے بھی بے نقاب کیا گیا تھا۔ یہ اشرافیہ ان بین الاقوامی انکشافات پر ‘انتقام’ کارڈ کے پیچھے نہیں چھپ سکتے ہیں۔

عمران خان نے کہا کہ ان میں بار بار وہی انکشاف کیا گیا  ہے کہ وہ وہ اپنی کرپشن کے خلاف 24 سالہ جدوجہد میں کہتے آئے ہیں کہ یہ ملک کی ترقی کے لئے سب سے بڑا خطرہ ہے۔ یہ اشرافیہ اقتدار میں آکر ملک کو لوٹتے ہیں۔ یہ بیرون ملک اپنے ناجائز منافع کو روکنے کے لئے منی لانڈرنگ کرتے ہیں۔ پھر وہ این آر اوز حاصل کرنے کے لئے اپنا سیاسی اثر و رسوخ استعمال کرتے ہیں۔ اسی طرح انہوں نے اپنی لوٹی ہوئی دولت کو محفوظ رکھا ہوا ہے۔

 انہوں نے مزید کہا کہ اس کا نتیجہ قوم کو بھگتنا پڑا ہے۔

یہ بھی پڑھیں | سفید بونے کو ٹکرا کر پیدا کیا گیا عجیب نیا ستارہ پہلے کی طرح نہیں ہے

اشرافیہ ٹیکس دہندگان کے ذریعہ پہلے قوم کا مال چوری کرتی ہے پھر این آر او کی وجہ سے قوم کے ٹیکس کا پیسہ بھی ضائع ہو جاتا ہے۔ یہ انکشافات تو بس ایک چھوٹی سی جھلک ہیں۔ انہوں نے لکھا کہ ہم براڈشیٹ سے اپنے اشرافیہ کی منی لانڈرنگ اور اس پر تحقیقات مکمل شفافیت کے ساتھ چاہتے ہیں۔

یاد رہے کہ اس سے ایک دن قبل وزیر اعظم نے کہا تھا کہ براڈ شیٹ فرم کے پاس سابق وزیر اعظم نواز شریف اور دیگر سے متعلقہ کچھ دوسرے پاکستانیوں کے ذریعہ منی لانڈرنگ کے ثبوت موجود ہیں۔ وزیر اعظم نے کابینہ اجلاس کے ایجنڈے پر بات چیت مکمل کرنے کے بعد اس معاملے پر تبادلہ خیال کیا۔ 

وزیر اطلاعات شبلی فراز نے کہا کہ کابینہ نے ایک کمیٹی تشکیل دی ہے جو براڈشیٹ اسکینڈل میں مذکور افراد کی تفصیلات ظاہر کرے گی۔ وزیر اطلاعات شبلی فراز نے مزید کہا کہ وزیر اعظم نے اب دستیاب مواد کی مکمل جانچ پڑتال کے بعد ناموں کو عام کرنے کا فیصلہ کیا ہے۔

جاویریہ حارث

جاویریہ حارث اردو خبر میں پاکستان میں مقیم مصنف اور سابق ایڈیٹر ہیں۔

سبسکرائب
کو مطلع کریں
guest
0 Comments
Inline Feedbacks
View all comments
0
آپ اس متعلق کیا کہتے ہیں؟ اپنی رائے کمنٹ کریںx
()
x